احمد حسین

آزادی مارچ کے شرکا نے قانون ہاتھ میں لیا تو سختی سے نمٹیں گے، شبلی فراز

مسلم لیگ ن کے رہنما جنرل (ر) عبدالقادر بلوچ نے کہا کہ مولانا فضل الرحمان نے دھرنے کا اعلان نہیں کیا ہوا لیکن اگر وہ دھرنا دیں گے تو ہم اس کا بھی حصہ بنیں گے۔

31 اکتوبر کو دھرنے کا اعلان کریں گے، عبدالغفور حیدری

رہنما جے یو آئی ف نے کہا کہ ہم اپنا آزادی مارچ لے کر پر امن طریقے سے ڈی چوک آئیں گے لیکن اگر حکومت نے کوئی مسئلہ کھڑا کرنے کی کوشش کی تو پورا ملک جام کر دیں گے۔

’’عمران خان کی تبدیلی کیلئے متبادل نام سامنے آ گیا‘‘

ناز بلوچ نے کہا ہے کہ پنجاب کے لوگ تو سب سے زیادہ نکلیں گے کیونکہ وہاں کی گورننس کا بیڑہ غرق کر دیا گیا ہے۔

عمران خان حالات ٹھیک نہیں کر سکتے تو انہیں حکومت چھوڑ دینی چاہیے، حسن نثار

حسن نثار نے کہا کہ موجودہ ملکی صورتحال انتہائی خراب ہے اس سے زیادہ خراب صورتحال ہو نہیں سکتی۔

جے یو آئی نے صرف آزادی مارچ کا اعلان کیا ہے دھرنے کا نہیں، احسن اقبال

احسن اقبال نے کہا کہ شہباز شریف کی پارٹی سے صدارت سے علیحدگی کی تمام خبریں غلط ہیں۔

سیاستدان ہمیشہ عوام کو بے وقوف بناتے ہیں، سینئر صحافی

رؤف کلاسرا نے کہا کہ پارلیمنٹ میں سارے کاروباری افراد بیٹھے ہوئے ہیں اور وہ اپنا فائدہ دیکھتے ہیں انہیں عوام سے کوئی دلچسپی نہیں ہے۔

کوشش ہو گی مولانا فضل الرحمان کے ساتھ کوئی نہ نکلے، محمود خان

سابق آئی جی اسلام آباد طاہر عالم خان نے کہا کہ 25 ہزار افراد بھی اگر اسلام آباد آ گئے تو انہیں قابو کرنا بہت مشکل ہو جائے گا۔

‘‘حکومت کو معاملات ہاتھ سے نکلتے دکھائی دے رہے ہیں’’

سسی پلیجو نے کہا کہ پیپلز پارٹی آزادی مارچ میں شامل ہو گی اور جہاں جہاں سے مارچ گزرے گا پیپلز پارٹی کے کارکنان ان کی حفاظت کریں گے۔

حکومت مشاورت کرے معیشت دو سال میں بہتر ہو جائے گی، تاجر رہنما

اویس لغاری نے کہا کہ حکومت نے جنوبی پنجاب کا بیڑا غرق کر دیا ہے جنوبی پنجاب کو صوبہ بنانا تھا اس کا سیکرٹریٹ بھی نہیں بنا سکے۔

فضل الرحمان اپنا حصہ لینے اسلام آباد آ رہے ہیں، علی محمد خان

مسلم لیگ ن کے رہنما طلال چوہدری نے کہا ہے کہ حکومت عوام کے لیے ترقیاتی منصوبوں کے افتتاح کے بجائے لنگر خانے کا افتتاح کر رہی ہے۔

ٹاپ اسٹوریز