ابوظہبی ٹیسٹ دلچسپ مراحل میں داخل

ابوظہبی :ابوظہبی ٹیسٹ کے دوسرے روز کے اختتام پر پاکستان کی پوری ٹیم کیویز کی پہلی اننگز کے 153 رنز کے جواب میں 227 رنز بنا کر پویلین لوٹ گئی ہے جبکہ کھیل کے اختتام پر نیوزی لینڈ نے ایک وکٹ کے نقصان پر56 رنز بنا لیے ہیں۔

ابوظہبی میں کھیلے جارہے میچ میں آج صبح جب دوسرے دن کا کھیل شروع ہوا تو اظہر علی 10 اور حارث سہیل 22 رنز بناکر وکٹ پر موجود تھے۔

دونوں کھلاڑیوں نے 64 رنز کی شراکت داری قائم کرکے ٹیم کا اسکور 91 رنز تک پہنچایا جس کے بعد حارث سہیل 38 رنز بنا کر لیگ اسپنراش سوڈھی کی گوگلی کا شکار بنے۔

ٹرینٹ بولٹ نے وکٹ گرنے کے پریشر کا فائدہ اٹھاتے ہوئے اگلے ہی اوور میں نے اظہر علی کو بھی چلتا کیا اظہر علی کی اننگز محض 22 رنز پر ہی محدود رہی۔

پانچویں وکٹ کے لیے مڈل آرڈر بلے باز اسد شفیق اور بابر اعظم نے 83 رنز کی شراکت داری قائم کی جس کے بعد اسد شفیق 43 رنز بنا کر ٹرنٹ بولٹ کی گیند پر بولڈ ہوگئے۔

پاکستان ٹیم کو جس وقت کریز پر استحکام کی ضرورت تھی اسی وقت کپتان سرفراز احمد انتہائی غیر ذمہ درانہ شاٹ کھیلتے ہوئے دو رنز بنا کر اعجاز پٹیل کی گیند پر کیچ آﺅٹ ہوئے۔

بلا ل آصف 11 رنز اسکور کرکے اعجاز پٹیل کی گیند پر اسٹمپ آﺅٹ ہوگئے، یاسر شاہ اور بابر اعظم نے 25 رنز کی شراکت داری قائم کی جس کے بعد یاسر 9 رنز بنا کر نیل ویگنر کی گیند پر غیر ذمہ درانہ شاٹ کھیل کر آﺅٹ ہوگئے۔

حسن علی 4 رنز بنا کر گرینڈ ہوم کی گیند پر آﺅٹ ہوئے، بابر اعظم 62رنز بنا کر بولٹ کی چوتھی وکٹ بنے اور پاکستانی اننگز 227رنز پر سمٹ گئی۔

نیوزی لینڈ کی جانب سے ٹام لیتھم اور جیت راول نے اننگز کا آغاز کیا اور حسن علی نے ٹام لیتھم کو صفر کی خفت سے دوچار کردیا جس کے بعد ولیمسن اور جیت راول نے کھیل کے اختتام پر ٹیم کا اسکور 56 رنز تک پہنچایا ۔

میچ کے پہلے روز نیوزی لینڈ نے ٹاس جیت کر پہلے بیٹنگ کا فیصلہ کیا تاہم مہمان ٹیم بڑا اسکور کرنے میں ناکام رہی۔ 39 کے مجموعی اسکور پر نیوزی لینڈ کے تین اہم کھلاڑی پاکستانی بالرز کا شکار ہو گئے تھے اور پوری ٹیم صرف 153 رنز پر آؤٹ ہوئی۔

حریف ٹیم کے پانچ کھلاڑی ڈبل فگرزمیں بھی داخل نہ ہوسکے تاہم کپتان ولیمسن نے 63 رنز کی نمایاں اننگز کھیلی۔

پاکستان کی جانب سے  یاسرشاہ نے تین کھلاڑیوں کو پویلین کو راہ دکھائی۔

متعلقہ خبریں

ٹاپ اسٹوریز