نوازشریف کی درخوست ضمانت پر نیب کا جواب جمع

نواز شریف علاج کیلئے سٹی میڈیکل کمپلیکس منتقل

فوٹو: فائل

اسلام آباد:  سابق وزیر اعظم نواز شریف کی درخواست ضمانت پر قومی احتساب بیورو(نیب) نے اپنا جواب جمع کرا دیا ہے۔

اسلام آباد ہائی کورٹ میں جمع کرائے گئے جواب میں نیب نے ضمانت کی مخالفت کرتے ہوئے کہا کہ میڈیکل گراؤنڈ پر نواز شریف کو ضمانت نہیں دی جا سکتی سابق وزیراعظم کی درخواست مسترد کر دی جائے۔

قومی احتساب بیورو نے کہا کہ؎ نواز شریف کی درخواست ضمانت ناقابل سماعت ہے، گرفتار مجرم نواز شریف کو دستیاب بہترین طبی سہولیات فراہم کی جارہی ہیں وہ طبی بنیادوں پر ضمانت کے حق دار نہیں۔

نیب نے نواز شریف کی پہلی سزا معطلی کی درخواست واپس لینے کی مخالفت کرتے ہوئے اپنے جواب میں کہا ہے کہ سابق وزیر اعظم کی متفرق درخواست ناقابل سماعت ہے ، خارج کی جائے۔

” position =”left”]

نیب کا کہنا ہے کہ نواز شریف نے جب پہلی درخواست دائر کی اُس وقت بھی ان کی میڈیکل ہسٹری موجود تھی، پہلی درخواست دائر کرتے وقت نواز شریف کی زندگی کو کوئی خطرہ نہیں تھا، پہلی سزا معطلی کی درخواست کے ساتھ نواز شریف کے میڈیکل ٹیسٹ کیوں نہ لگائے گئے، نواز شریف کی پہلی سزا معطلی کی درخواست واپس لینے کی درخواست قابل سماعت نہیں، عدالت طبی بنیاد پر دائر درخواست کی بجائے پہلی سزا معطلی کی درخواست پر سماعت کرے۔

یاد رہے کہ  العزیزیہ ریفرنس میں قصوروار ٹھہرائے جانے کے بعد سابق وزیراعظم نے سزا معطلی کیلئے اسلام آباد ہائی کورٹ سے رجوع کیا تھا۔ بعد ازاں نوازشریف کی طبیعت خراب ہوگئی تو ان کے وکیل خواجہ حارث نے عدالت میں میڈیکل گراؤنڈ پر سزا معطلی درخواست دائر کی۔

میڈیکل گراؤنڈ پر سزا معطلی کی درخواست پر سماعت کے دوران عدالت نے سابق وزیراعظم کی رپورٹس بھی طلب کی تھیں۔ خواجہ حارث نے متفرق درخواست میں کہا ہے کہ ہم نواز شریف کی سزا معطلی والی پہلی درخواست واپس لے کر میڈیکل گراؤنڈ والی اپیل پر پیروی کرنا چاہتے ہیں۔

متعلقہ خبریں

ٹاپ اسٹوریز