کالعدم تنظیموں کے خلاف کارروائی دباؤ کا نتیجہ نہیں، فواد چودھری

March 6, 2019
وفاقی کابینہ میں کوئی تبدیلی نہیں ہو رہی،فواد چوہدری

فوٹو: فائل

اسلام آباد: وفاقی وزیراطلاعات ونشریات فواد چودھری نے واضح کیا ہے کہ کالعدم تنظیموں کے خلاف ایکشن کسی پریشریا دباؤ کا نتیجہ نہیں ہے۔ انہوں نے کہا کہ جو کارروائی کی گئی ہے وہ نیشنل ایکشن پلان اور نیشنل سیکیورٹی کمیٹی کے اجلاس میں کیے گئے فیصلوں پر پیشرفت کا نتیجہ ہے۔

وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات نے یہ بات بھارتی چینل انڈیا ٹوڈے کو دیے گئے ایک انٹرویو میں کہی ہے۔

فواد چودھری نے کہا کہ ہم خطے میں قیام امن کے خواہاں ہیں اور پاکستان اپنی بین الاقوامی ذمہ داریاں پوری کرنے کے لیے پرعزم ہے۔

ایک سوال پر ان کا کہنا تھا کہ دنیا دیکھ رہی ہے کہ امن کے لیے کون کھڑا ہے ؟ اور کون جنگی جنون کو ہوا دے رہا ہے؟

بھارتی چینل کو انٹرویو دیتے ہوئے وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات فواد چودھری نے کہا کہ ہم نے بھارتی پائلٹ کو کس طرح واپس کیا؟ سب کے سامنے ہے جب کہ اس کے برعکس بھارت نے شاکر اللہ کی نعش پاکستان واپس بھیجی۔

ایک سوال پر انہوں نے کہا کہ پلوامہ واقعہ پر بھارت کی جانب سے ٹھوس شواہد کا انتظار ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ بھارت سے شواہد مانگنا بھی بھارت میں ایک مسئلہ بن جاتا ہے۔

وفاقی وزیر نے مشورہ دیا کہ بھارت کو اپنامحاسبہ کرنا چاہئیے۔ انہوں نے کہا کہ بھارتی افواج کے مقبوضہ کشمیر میں جاری مظالم بہت بڑا مسئلہ ہیں۔ انہوں نے واضح کیا کہ کشمیریوں سے ہمارا خون کا رشتہ ہے۔

بھارتی ٹی وی چینل کو انٹرویو دیتے ہوئے پاکستان کے وفاقی وزیراطلاعات و نشریات فواد چودھری نے کہا کہ ہم قانون کی حکمرانی پہ یقین رکھنے والا معاشرہ ہیں۔ ان کا کہنا تھا کہ آگے بڑھنے کے لیے شواہد کی ضرورت ہے۔

متعلقہ خبریں

ٹاپ اسٹوریز