پاکستانی کرکٹ کی تاریخ میں پہلی بار خواتین پر مشتمل سلیکشن کمیٹی

لاہور: پاکستانی کرکٹ کی تاریخ میں پہلی بار خواتین کرکٹ ٹیم کے لیے خواتین پر مشتمل سلیکشن کمیٹی قائم کردی گئی۔

تین رکنی سلیکشن کمیٹی سابق ویمن کرکٹرز پر مشتمل ہے۔ سابق کرکٹر اور کرکٹ کمیٹی کی ممبر عروج ممتاز کوپاکستان ویمن کرکٹ کاچیف سلیکٹر مقرر کیا گیا ہے۔

تین رکنی کمیٹی میں عروج کے ساتھ سابق کرکٹرز اسما ویہ اقبال اورمرینہ اقبال شامل ہوں گی۔ پاکستان کرکٹ بورڈ (پی سی بی) نے فروری میں معاہدہ ختم ہونے کے بعد پرانی سلیکشن کمیٹی کی تجدید نہ کرنے پر اتفاق کیا ہے۔

یہ بھی پڑھیں: پاکستان میں ویمن کرکٹ کافی تاخیر سے شروع ہوئی، جلال الدین

اس پہلے سابق ٹیسٹ کرکٹر جلال الدین کی سربراہی میں تین رکنی سلیکشن کمیٹی قائم کام کررہی تھی۔ اسماویہ اقبال اور اخترسرفراز تین رکنی کمیٹی کا حصہ تھے۔

پاکستان کرکٹ بورڈ نے ویمن کرکٹرز کی صلاحیتیوں پر اعتماد کا اظہار کرتے ہوئے ویمن کرکٹ کے لیے خواتین کرکٹرز پر مشتمل سلیکشن کمیٹی قائم کر دی گئی۔

پاکستانی کرکٹ کی تاریخ میں پہلی بار خواتین پر مشتمل سلیکشن کمیٹی قائم کی گئی ہے۔ ماضی میں ویمن کرکٹ ٹیم کی سلیکشن کے لیے مرد کرکٹرز کے ساتھ خواتین کرکٹرز کو شامل کیا جاتا رہا ہے۔

یہ بھی پڑھیں: ہیڈ کوچ پاکستان ویمن کرکٹ ٹیم کے اہم انکشافات

اس سےپہلے سابق ٹیسٹ کرکٹر جلال الدین کی سربراہی میں تین رکنی سلیکشن کمیٹی قائم کام کررہی تھی تاہم جلال الدین اوراختر سرفرازاب سلیکشن کمیٹی کا حصہ نہیں ہوں گے۔

31 سالہ اسماویہ اقبال 2005 سے2017 تک پاکستان خواتین کرکٹ ٹیم کا حصہ رہیں۔

اس دوران ا نہوں نے پاکستان کی جانب سے92 انٹرنیشنل ون ڈے اور68 ٹی ٹوئنٹی انٹرنیشنل میچ کھیلے جبکہ 32 سالہ مرینہ اقبال 2009 سے2017 تک پاکستان کی نمائندگی کرچکی ہیں اور ویمن انٹرنیشنل میچوں میں بطور کمنٹیٹرکام کرتی رہی ہیں۔

متعلقہ خبریں

ٹاپ اسٹوریز