پنجاب حکومت نے77 وزرا کے لیے نئی گاڑیاں خریدنے کا فیصلہ کر لیا

پنجاب حکومت نے77وزرا کے لیے نئی گاڑیاں خریدنے کا فیصلہ کر لیا

فوٹو: فائل

لاہور: پنجاب حکومت کی جانب سے وزرا کے لیے 77 نئی گاڑیاں خریدنے کا فیصلے کر لیا گیا۔

پنجاب اسمبلی میں نئی گاڑیاں خریدنے کے خلاف جمع کرائی گئی قرار داد میں انکشاف ہوا کہ پنجاب حکومت نے اپنے وزرا کے لیے 77 نئی گاڑیاں خریدنے کا فیصلہ کر لیا ہے۔

کفایت شعاری اور میانہ روی کی باتیں کرنے والے وزیر اعظم عمران خان کی پنجاب حکومت نے سرکاری خزانے سے 17 کروڑ 47 لاکھ روپے کی خطیر رقم سے گاڑیاں خریدنے کا فیصلہ کیا۔

پنجاب حکومت کی گاڑیاں خریدنے کے فیصلے کے خلاف مسلم لیگ نون کے رکن پنجاب اسمبلی میاں مناظر حسین رانجھا نے اسمبلی میں قرار داد جمع کرائی۔

قرار داد کے متن میں کہا گیا ہے کہ حکومت پنجاب کی جانب سے ریاست مدینہ کے سنہری اصول کھل کر سامنے آ گئے۔ پنجاب حکومت نے اپنے وزرا کے لیے 77 نئی گاڑیاں خریدنے کا فیصلہ کیا ہے۔ جس کے لیے سرکاری خزانے سے 17 کروڑ 47 لاکھ روپے کی خطیر رقم خرچ کی جائے گی۔

یہ بھی پڑھیں پنجاب حکومت کے وزرا نے سادگی مہم ٹھکرا کر نئی گاڑیاں مانگ لیں

متن کے مطابق ایک جانب حکومت کفایت شعاری کا نعرہ لگاتی ہے تو دوسری جانب اپنے وزراء کے لیے شاہ خرچیوں کا سلسلہ جاری رکھے ہوئے ہے۔ غریب عوام کے لیے کفایت شعاری اختیار کرنے کا مشورہ اور اپنے لیے شاہ خرچیاں۔

حکومت کے اس دوغلے پن پر عوام میں سخت تشویش اور غم وغصہ پایا جا رہا ہے، قرارداد

اسمبلی میں جمع کرائی گئی قرار داد میں حکومت سے مطالبہ کیا گیا ہے کہ وہ اپنوں کو نوازنے کے بجائے مہنگائی میں پسی ہوئی عوام کو ریلیف فراہم کرے۔

اس سے قبل سال کے آغاز پر پنجاب حکومت کے وزیروں اورمشیروں نے نئی گاڑیاں مانگتے ہوئے پرانی گاڑیاں استعمال کرنے سے انکار کر دیا تھا۔ صوبائی حکومت نے بھی نئی گاڑیوں کی فہرست تیار کرلی تھی۔

متعلقہ خبریں

ٹاپ اسٹوریز