ای سی سی نے رمضان پیکیج پر عمل درآمد کے لئے چار رکنی کمیٹی تشکیل دے دی

April 17, 2019


اسلام آباد: وزیر خزانہ اسد عمر کی زیرصدارت کابینہ کی اقتصادی رابطہ کمیٹی (ای سی سی) کا اجلاس ہوا جس کے دوران گلگت بلتستان کونسل کے لیے 33 کروڑ جبکہ وزارتِ داخلہ کے لیے چار کروڑ سے زائد کی سپلیمنٹری گرانٹ منظور کرلی گئی۔

ای سی سی نے یوٹیلٹی اسٹورز کارپوریشن کےلئے رمضان پیکج پر عملدرآمد کےلئے شیخ رشید کی سربراہی میں چار رکنی کمیٹی تشکیل دے دی ۔

ای سی سی نے ہدایت دی ہے کہ رمضان پیکج کےلئے جلد از جلد خریداری کو  یقینی بنایا جائے۔

ذرائع کے مطابق ای سی سی نے یوٹیلٹی اسٹورز کارپوریشن کےلئے حکومتی گارنٹی جاری کرنے کی منظوری دیدی۔

ای سی سی نے ریلوے فریٹ کے ذریعے پیٹرولیم مصنوعات کی ملک بھر میں ترسیل کی سمری منظور کرلی جبکہ پیٹرولیم مصنوعات کےلئے او ایم سیز کو لائسنس جاری کرنے کے طریقہ کار پر نظرثانی کی سمری کا جائزہ لیا گیا۔

ای سی سی نے 44.3 ملین روپے کی وزارت داخلہ کے لئے سال 2017-18کی سپلیمنٹری گرانٹ جاری کرنے کی منظوری دیدی۔

اسی طرح ای سی سی نے حکومت کی آن آرائیول ویزہ پالیسی کی میڈیا میں تشہیر کےلئے 50 ملین روپے کی سمری منظور کرلی۔

ای سی سی نے وزارت اطلاعات کی سمری پر میڈیا میں حکومتی کاموں کی تشہیری مہم کےلئے خصوصی گرانٹ جاری کرنے کی منظوری دیدی۔

ای سی سی نے سال 2018-19کےلئے مختلف سپلیمنٹری گرانٹ دینے کی سمریاں بھی منظور کرلیں۔

اجلاس میں وزارت دفاع کے لئے سپلیمنٹری گرانٹ اور ایس ایس ڈی کےلئے فنڈز جاری کرنے کی سمری منظور کرلی گئی جبکہ وزارت تعلیم کو سال 2018-19 کے لئے 700 ملین روپے کی سپلیمنٹری گرانٹ جاری کرنے کی بھی منظوری دی گئی۔ یہ گرانٹ این سی ایچ ڈی کو ملے گی۔

اجلاس میں گلگت بلتستان کونسل کے لئے 337ملین روپے کی گرانٹ منظور کرلی گئی۔ ایف سی کے پی کے اور ایف آئی اے ہیڈ کوارٹرز کےلئے تکنیکی سپلیمنٹری گرانٹ جاری کرنے کی منظوری دی گئی۔

اس کے علاوہ ایمیگریشن ڈویژن کےلئے 133ملین روپے کی سپلیمنٹری گرانٹ جاری کرنے کی بھی منظوری دی گئی۔

متعلقہ خبریں

ٹاپ اسٹوریز