خون کی بیماری ہیموفیلیا سے آگاہی کاعالمی دن آج منایا جارہا ہے

خون کی بیماری ہیموفیلیا سے آگاہی کاعالمی دن آج منایا جارہا ہے

فائل فوٹو

پاکستان سمیت دنیا بھر میں آج خون کی بیماری ہیموفیلیا سے آگاہی کا دن منایا جارہا ہے جس کا مقصد  لوگوں میں اس بیماری کے  متعلق آگاہی پیدا کرنا ہے۔

ہیموفیلیا ایک موروثی بیماری ہے جو والدین سے بچوں میں منتقل ہوتی ہے اور کزن میرج کی وجہ سے بھی زیادہ پھیلتی ہے۔ اس کی علامات میں جسم پر نشان پڑنا، زخم آنے کی صورت میں خون کا نہ رکنا اور جوڑوں کا سوجھ جانا شامل ہیں۔

موروثی بیماری خون میں پروٹین فیکٹر نہ ہونے کی وجہ سے پیدا ہوتی ہے اور مریضوں میں خون جمنے کی صلاحیتیں متاثرہوتی ہیں۔ کسی حادثے کی صورت میں خون روکنا مشکل ہوجاتا ہے اور خطرناک صورت حال پیش آسکتی ہے۔

بیماری کی شدت کے باعث مریض کے جسم سے کسی حادثے کے بغیر بھی خون نکل سکتا ہے۔ اگر بیماری کی نوعیت اور شدت قدرے کم ہو تو مریض کا خون سرجری یا حادثے کی صورت میں عام حالات سے زیادہ بہتا ہے اور انجماد نہیں ہو پاتا۔

ماہرین کےمطابق اس خطرناک بیماری کا علاج بہترین تشخیص کے بغیر ممکن نہیں۔ ہیموفیلیا کا واحد حل پروٹین فیکٹر کے انجیکشن ہیں۔ مریض کو ایک ماہ میں بارہ انجیکشن لگائے جاتے ہیں اور ایک کی قیمت دس سے 12 ہزار ہے۔

محتاط اندانے کے مطابق پاکستان میں دس ہزار کے قریب افراد ہیموفیلیا کا شکار ہیں تاہم مستند معلومات دستیاب نہیں ہیں۔ مردوں کی نسبت خواتین میں یہ بیماری زیادہ پائی جاتی ہے۔

متعلقہ خبریں

ٹاپ اسٹوریز