مقبوضہ کشمیر میں بھارتی مظالم جاری، 5 کشمیری شہید

May 16, 2019


سرینگر: مقبوضہ کشمیر میں بھارت نے انسانی حقوق کی دھجیاں اڑا دیں۔ قابض بھارتی فوج نے علاقہ میں مسلسل  دہشت گردی کرتے ہوئے آج بھی پانچ کشمیریوں کو شہید کر دیا۔

کشمیر میڈیا سروس کے مطابق مقبوضہ جموں و کشمیر میں قابض بھارتی فوج کے مظالم کا سلسلہ بدستور جاری ہے۔ بھارتی فوج نے کشمیر کے ضلع پلوامہ اور بارا مولا میں نام نہاد سرچ آپریشن کے دوران فائرنگ کر کے 5 کمشیریوں کو شہید کر دیا جبکہ بھارتی فوج کی جانب سے ایک گھر بھی تباہ کر دیا گیا۔

بھارتی فوج کی فائرنگ  سے شہید ہونے والوں میں سے 2 کا تعلق ضلع پلوامہ جبکہ 3 کا تعلق بارا مولا سے ہے۔

رمضان المبارک میں بھی بھارتی فوج کی جارحیت جاری ہے۔ جس کے خلاف لوگ گھروں سے باہر نکل آئے اور بھارتی حکومت اور فورسز کے خلاف احتجاج کیا اس دوران بھارتی سیکیورٹی فورسز کی جانب سے پیلٹ گن اور آنسو گیس کا استعمال بھی کیا گیا جس سے متعدد کشمیری زخمی ہو گئی۔

یہ بھی پڑھیں مقبوضہ کشمیر میں بھارتی مظالم، اپریل میں 13 کشمیری شہید

ضلع پلوامہ میں کشیدگی کے باعث قابض انتظامہ نے علاقہ میں کرفیو نافذ کر دیا جبکہ انٹرنیٹ کی سروس بھی معطل کر دی۔

چار روز قبل بھی بھارتی فوج نے ضلع شوپیاں کے علاقہ ستی پورہ میں نام نہاد آپریشن کے دوران دو افراد کو شہید کر دیا تھا۔ بھارتی فوج کی 34 راشٹریہ رائفل، سینٹرل ریزرو پولیس فورس اور اسپیشل سروس گروپ کے اہلکاروں نے علاقے میں سرچ آپریشن کے نام پر مشترکہ کارروائی کی تھی جبکہ اس سے ایک روز قبل بھی ایک کشمیری نوجوان کو شہید کر دیا گیا تھا۔

گزشتہ ماہ اپریل میں مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فوج نے مختلف کارروائیوں کے دوران فائرنگ کر کے 13 بے گناہ کشمیریوں کو شہید کیا۔

بین الاقوامی نیوز ایجنسی رائٹرز نے گزشتہ ماہ اپنی جاری کردہ رپورٹ میں مقبوضہ کشمیر میں قابض بھارتی فوج کی جانب سے سرچ آپریشن کے دوران شہریوں کو بطور انسانی ڈھال استعمال کرنے کا انکشاف کیا تھا۔

رپورٹ کے مطابق 17 فروری کی درمیانی رات سینکڑوں بھارتی فوجیوں نے ضلع پلواما کے گاؤں پنگلان میں دھاوا بولا اور 18 گھنٹوں کی کارروائی میں 4 کشمیری شہید اور متعدد گھر تباہ کر دیے گئے جب کہ اس دوران 120 کشمیری آنسو گیس اور قابض فوج کے تشدد سے ذہنی مریض بن گئے۔

رپورٹ میں کہا گیا کہ پلواما حملے کے بعد سے اب تک سینکڑوں کشمیری گرفتار اور متعدد افراد نام نہاد سرچ آپریشن کی آڑ میں شہید کردیے گئے جب کہ بھارتی فوج کی جانب سے انسانی ڈھال کو لڑائی کے دوران استعمال کرنا بین الاقوامی قوانین کی خلاف ورزی ہے۔ جو قوانین بین الاقوامی قوانین میں غیرقانونی ہیں وہ بھارتی قانون میں جائز ہیں۔

متعلقہ خبریں

ٹاپ اسٹوریز