پاکستان :عالمی کمپنیوں کیلئے کاروبار مقامی ہنرمندوں کو نوکریاں دینے سے مشروط

پہلے پاکستانی انجینئرزکونوکریاں دیں، پاکستان نے عالمی کمپنیوں کےلیے کاروبار کو مقامی ہنرمندوں کو نوکریاں دینے سے مشروط کردیاہے۔ ۔وزیرسائنس اینڈ ٹیکنالوجی فواد چوہدری نے کہا ہے کہ  یہ پابندی پاکستان کی جاب مارکیٹ کے مفاد میں ہے۔

وفاقی وزیر سائنس اینڈ  ٹیکنالوجی فواد چودھری نے کہا ہے پاکستان میں کام کرنے والی بین الاقوامی کمپنیوں کومقامی انجینئرز اور تکنیکی ورکرز کو نوکریاں دینا ہونگی،ماہرین کی عدم دستیابی کی صورت میں انہیں غیر ملکی انجینئرز اورتکنیکی ورکرز لانے کے لیےانجینئرنگ کونسل سے اجازت لینا ہوگی۔

فواد چودھری نے یہ بات سماجی رابطے کی ویب سائٹ پر  اپنے ٹویٹ  پیغام میں کہی ۔ انہوں نے کہا کہ بین الاقوامی کمپنیوں  کوہدایات جاری کیں ہیں کہ جو بین الاقوامی کمپنیاں پاکستان میں کاروبارکرناچاہتی ہیں،وہ  پاکستانی انجینرز اور تکنیکی ورکرز کو نوکریاں دیں ۔

وزیر سائنس اینڈ ٹیکنالوجی فواد چودھری نے کہا اگر مخصوص مہارت پاکستان میں دستیاب نہیں ہے اور بیرون ممالک سے ماہر لوگوں کو لانا ضروری ہے تو بین الاقوامی کمپنیوں کو انجینئرنگ کونسل سے عارضی رجسٹریشن لینا ہو گی۔ انہوں نے کہا کہ  یہ پابندی پاکستان کی جاب مارکیٹ کا مفاد ہے۔

یہ بھی پڑھیے:جدید تقاضوں سے ہم آہنگ نہ ہوئے تو ہم پیچھے رہ جائیں گے، فواد چوہدری

متعلقہ خبریں

ٹاپ اسٹوریز