ترقیاتی بجٹ کیلئے 1837ارب روپے مختص کرنے کی تجویز

وفاقی وزیر برائے منصوبہ بندی وترقی مخدوم خسرو بختیار نے کہاہے کہ نئے مالی سال کےلیے  وفاق اور صوبوں کا 1837 ارب کا ترقیاتی بجٹ مختص کیا گیا ہے،وفاقی پی ایس ڈی پی کا حجم 925 ارب روپے ہوگا،نئے ترقیاتی منصوبوں کیلئے 250 ارب روپے مختص کیئے گئے ہیں۔

سالانہ پلان کوآرڈینیشن کمیٹی اجلاس کے بعد ذرائع ابلاغ کے نمائندوں سے گفتگو میں وفاقی وزیربرائے ترقی و منصوبہ بندی مخدوم خسرو بختیار نے کہا کہ 80 فیصدمکمل ہونے والے پرانے منصوبوں کیلئے مکمل فنڈز مختص کیئے گئے ہیں۔صوبوں اور وفاق کے درمیان سہ ماہی بنیاد پر کوآرڈینیشن کمیٹی کا اجلاس ہوگا۔

انہوں نے کہا کہ گزشتہ حکومت نےآخری پی ایس ڈی پی میں دو کھرب کے منصوبے ڈالے۔تاہم خاطر خواہ فنڈز مختص نہیں کیئے گئے۔

سالانہ پلان کوارڈینیشن کمیٹی اجلاس میں آئندہ مالی سال میں بنیادی ڈھانچے کے لیے 371 ارب روپے رکھنے کی تجویز دی گئی ۔ توانائی کے شعبے کے لیے 80 ارب روپے،ٹرانسپورٹ اور مواصلات کے لئے 200 ارب روپے،پانی کے لیے 70 ارب روپے ،سماجی شعبے کے لیے 94 ارب روپے،آزادکشمیر اور گلگت بلتستان سمیت خصوصی علاقوں کے لیے 39 ارب رکھنے کی تجویز دی گئی ۔

انضمام فاٹا کے لیے 24 ارب،سائنس و انفارمیشن ٹیکنالوجی کے لیے 12 ارب ،ایچ ای سی سمیت تعلیم کے لیے 32 ارب اورپائیدار ترقی اہداف کے حصول پروگرام کے لیے 24 ارب روپے رکھنے کی تجویز دی گئی ۔

سالانہ منصوبہ بندی رابطہ کمیٹی کے اجلاس میں سندھ کے منصوبے شامل نہ کئے جانے پرسندھ کی طرف سے احتجاج بھی کیا گیا۔

صوبائی وزیر شبیر بجارانی نے کہا کہ سندھ کی 51 ارب روپے کی 36 سکیمیں ڈٰراپ کردی گئی ہیں۔ سکھربیراج کی مرمت ، جامشور سیون روڈ کی تعیمر کی اسکیم ڈراپ کی گئی ہے ۔

سدرن بائی پاس میر پور خاص اور عمر کوٹ روڈ کی تعمیرسمیت سندھ کے آبپاشی کے چار مںصوبےبھی  ڈراپ کردئیے گئے ہیں۔

شبیر بجارانی نے کہا کہ آئںدہ مالی سال کے بجٹ میں کراچی گریٹرواٹر سپلائی اسکیم شامل نہیں کی گئی ۔ پی ایس ڈی پی کی 293 میں سے سندھ کی  صرف 19 اسکیمیں شامل کی گئی ہیں اور ان کے لیے بھی محض  10.49 ارب رکھے گئے ہیں۔

شبیر بجارانی نے کہا کہ آربی اوڈی اور دراوٹ ڈیم کو بھی پی ایس ڈی پی سے ڈراپ کردیاگیاہےاوراندرون سندھ کو کم ترقی یافتہ علاقوں میں شامل نہیں کیاگیا۔

یہ بھی پڑھیے:پنجاب کے ترقیاتی بجٹ میں صرف 23 ارب 80 کروڑ روپے کے اضافے کی تجویز

وزیر مںصوبہ بندی وترقی مخدوم خسرو بختیار نے  صوبائٰی وزیرسندھ شبیر بجارانی  کو تحفظات دورکرنے کی یقین دہانی کرائی ۔

متعلقہ خبریں

ٹاپ اسٹوریز