ہاشم آملہ کی فٹنس کا رمضان سے کیا تعلق؟

جنوبی افریقہ کے مایہ ناز بلے باز ہاشم آملہ اپنے کیریئر کے سب سے اہم امتحان کرکٹ ورلڈ کپ 2019 کے قریب پہنچ چکے ہیں، اپنی ٹیم کے سب سے سینئر کھلاڑی ہونے کی حیثیت سے ان کے کندھوں پر بھاری ذمہ داری عائد ہوتی ہے۔

یاد رہے ورلڈ کپ 2019 کا آغاز ماہ رمضان میں ہو رہا ہے، اور ہاشم آملہ ایک باعمل مسلمان ہیں جو اپنی جسمانی اور ذہنی فٹنس کا راز رمضان کو قرار دیتے ہیں۔

ویسٹ انڈیز کے خلاف میچ کے بعد انٹرویو میں ان کا کہنا تھا کہ ’’ روزہ میری صلاحیتوں میں نکھار کے حوالے سے مدد گار ثابت ہوتا ہے، اس ماہ مبارک کا مجھے پورا سال انتظار رہتا ہے کیونکہ یہ سال کا سب سے بہترین مہینہ ہوتا ہے‘‘

بحیثیت اوپنر ہاشم آملہ کی حالیہ کارکردگی زیادہ متاثر کن نہیں تھی جس کی وجہ سے ٹیم سیلیکٹرز بھی پریشان دکھائی دیے تاہم ورلڈ کپ وارم اپ میچز میں لگاتار دو نصف سنچریاں داغ کر انہوں نے تمام ٹیموں کے لئے خطرے کی گھنٹی بجا دی ہے۔

ہاشم آملہ نے 2012 میں انگلینڈ کے دورے کے دوران اوول کے میدان میں جنوبی افریقہ کی تاریخ کا سب سے بڑا ٹیسٹ اسکور 311 رنز بنایا تھا۔

انہوں نے اب تک اپنے کیریئرمیں 174 ایک روزہ میچ کھیلے ہیں جن میں 27 سینچریوں کی مدد سے 49 رنز کی اوسط سے 7910 رنز اسکور کئے ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ ٹی ٹوئنٹی اور ایک روزہ کرکٹ میں بہت فرق ہے، میں نے کوچ کے ساتھ دو ہفتے تربیت کے ذریعے اپنی خامیوں سے نجات حاصل کرنے کی کوشش کی ہے۔

جنوبی افریقہ کی ٹیم پر تبصرہ کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ اس میں تجربہ کار کھلاڑی موجود ہیں جس کا ٹیم کو بھرپور فائدہ ہو گا۔

متعلقہ خبریں