میشا شفیع کے خلاف ہتک عزت کیس ، 4گواہوں کے بیانات پر جرح مکمل

علی ظفرکا ہتک عزت کا دعوی، میشا کی درخواست پر فیصلہ کل سنایا جائیگا

لاہور کی مقامی عدالت میں گلوکارہ میشا شفیع کے خلاف ہتک عزت کیس میں اداکارعلی ظفر کے 4گواہوں کے بیانات پر جرح مکمل ہوگئی ہے ۔ عدالت نے کیس کی آئندہ سماعت گیارہ جون تک ملتوی کردی۔

لاہور کی مقامی عدالت میں ایڈیشنل سیشن جج امجد علی شاہ نے کیس کی سماعت  کی ۔

گلوکارہ میشا شفیع کے وکلاء کی طرف سے علی ظفر کے چار گواہان پر آج جرح ہوئی جبکہ چار گواہان پر گزشتہ روز جرح کی گئی تھی ۔

اس کیس میں مجموعی طور پر علی ظفر کے 9 گواہان پر جرح مکمل ہوچکی ہے ۔ عدالت نے آئندہ سماعت پر دیگر گواہان کو جرح کیلئے طلب کر لیا ہے۔

گواہان کا کہنا تھا وہ ریہرسل سیشن میں  موجود تھے ، میشا شفیع کے ساتھ ہراسانی کا کوئی واقعہ پیش نہیں آیا۔

یاد رہے 14 مئی کو گلوکارہ میشا شفیع ،اداکار علی ظفر کی طرف سے دائر ہتک عزت کے دعوی سے متعلق درخواست کی سماعت  میں سپریم کورٹ  سے ریلیف حاصل کرنے میں کامیاب ہوگئی تھیں اور عدالت نے گواہوں کے بیانات اور جرح ایک ساتھ کرنے کی اجازت دی تھی ۔

سپریم کورٹ نے  گواہان پر بیان کے فوری بعد جرح کرنے کا ڈسٹرکٹ کورٹ کا حکم بھی کالعدم قرار دے دیا تھا۔

عدالت نے علی ظفر کے وکیل کو ایک ہفتے میں گواہوں کے بیان حلفی جمع کرانے کا حکم دیا تھا اور میشا شفیع کے وکیل نے گواہان پر جرح کرنے کیلئے ایک ہفتے کا وقت مانگ لیا تھا۔

عدالت نے اپنے حکم میں کہاتھا کہ میشا شفیع کے وکیل گواہان پر جرح کی تیاری 7 روز مکمل کرنے کا حکم دیا تھا۔عدالت کی طرف سے میشا شفیع کے وکلاء کو کہا گیا تھاکہ وہ تمام گواہوں کے بیانات پر ایک ساتھ جرح کے لیے اپنی تیاری مکمل کرکے آئیں۔

یہ بھی پڑھیے:میشا شفیع کیس، علی ظفر کے گواہان کا بیان حلفی جمع

 

متعلقہ خبریں

ٹاپ اسٹوریز