عمران خان : سانپ کی کھال والی ’عید چپل‘ وائلڈ لائف لے گیا

عمران خان : سانپ کی کھال والی ’عید چپل‘ وائلڈ لائف لے گیا

پشاور: محکمہ وائلڈ لائف پشاور نے وزیراعظم عمران خان کے لیے ’سانپ کی کھال‘ سے تیارکردہ خصوصی پشاوری  چپل اپنے قبضے میں لے لی اور ’کپتان چپل‘ کے مالک چاچا نورالدین کو بھی طلب کرلیا ہے۔

برطانوی نشریاتی ادارے ’بی بی سی ‘ کے مطابق چاچا نورالدین کے بڑے بیٹے سلام الدین نے بتایا کہ ذرائع ابلاغ  پر وزیراعظم کے لیے سانپ کی کھال سے چپل کی تیاری کی اطلاعات آنے کے بعد محکمہ وائلڈ لائف کے اہلکار ان کی دکان پرآئے اور چپل کا وہ جوڑا اپنے ہمراہ لے گئے جو عمران خان کے لیے بطور خاص تیار کیا گیا تھا۔

عمران خان: عید پر سانپ کی کھال سے تیار کردہ چپل پہنیں گے؟

سلام الدین کے مطابق محکمہ وائلڈ لائف کے اہلکاروں نے انہیں پیر کے دن دفتر بھی طلب کیا ہے وگرنہ ہم پر جرمانہ بھی کیا جا سکتا ہے۔

عمران خان: عید پر سانپ کی کھال سے تیار کردہ چپل پہنیں گے؟

بی بی سی کے مطابق پشاور کے محکمہ وائلڈ لائف کے ڈی ایف او عبدالعلیم نے اس ضمن میں بتایا ہے کہ چاچا نور الدین کے حوالے سے ممنوع نوعیت کی کھالیں استعمال کرنے کی اطلاعات پر ان کی دکان پر چھاپا مارا گیا اور وہاں سے چپل کا ایک جوڑا  بھی بر آمد ہوا ہے۔

عبدالعلیم کا کہنا ہے  کہ اس ضمن میں قانونی کارروائی شروع کردی گئی ہے اور چپل ماہرین کو معائنہ کے لیے بھیج دی ہے۔

ڈی ایف او عبدالعلیم نے مطابق ماہرین کی رپورٹ آنے کے بعد فیصلہ کیا جائے گا کہ چاچا نورالدین کے خلاف کیا قانونی کارروائی کی جائے؟

وزیراعظم عمران خان کے ایک ’فین‘ نعمان نے امریکہ سے سانپ کی کھال بطور خاص نورالدین چاچا کو اس خواہش کے ساتھ بھجوائی تھی کہ وہ اپنے کپتان کو عیدالفطر پر خاص تحفہ دینا چاہتا ہے۔

مشہور زمانہ کپتان چپل والے نورالدین چاچا اس کھال سے چپل تیار کررہے تھے۔ ان کا کہنا تھا کہ سانپ کی کھال سے تیارہونے والی یہ چپل اپنی نوعیت کی ملک میں ’پہلی چپل‘ ہوگی۔

تیاری کے مختلف مراحل سے گزرنے والی ’خاص چپل‘ کے متعلق نورالدین چاچا کا دعویٰ تھا کہ تیار ہونے والی چپل انتہائی آرام دہ ہوگی، عمران خان کو گرمی نہیں لگے گی اور وہ اسے پہن کر کتنا بھی کام کریں انہیں تھکن نہیں ہوگی۔ وہ انتہائی پرامید تھے کہ کپتان کو چپل پسند آئے گی

سانپ کی کھال سے تیار کی جانے والی چپل کے متعلق ان کا کہنا تھا کہ اس کا وزن جوگر شوز سے بھی زیادہ ہلکا ہوگا اور پہننے والے کو معلوم ہی نہیں ہو گا کہ اس نے کوئی چپل پہن رکھی ہے۔ قیمت کے متعلق بتایا گیا تھا کہ 40 ہزار روپے ہے۔

بی بی سی کو نورالدین چاچا کے بڑے بیٹے سلام الدین نے بتایا تھا کہ مکمل طور پر ہاتھ سے تیار ہونے والی چپل کی تیاری میں سانپ کی چار فٹ کھال کا استعمال ہو گا جب کہ اوپری حصے پر اٹلی سے درآمد شدہ اسپنج استعمال کیا جائے گا۔

متعلقہ خبریں

ٹاپ اسٹوریز