غلطی ہے تو مجھے ہٹاؤ،عوام کو کیوں تکلیف دے رہے ہو؟وزیراعلیٰ

کراچی: وزیراعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ نے انتہائی برہمی کا اظہار کرتے ہوئے استفسار کیا ہے کہ اگر ہم نے کوئی غلطی کی ہے تو مجھے ہٹاؤ لیکن وفاقی حکومت باقی کراچی کے عوام کو کیوں تکلیف دے رہی ہے؟ انہوں نے کہا کہ میں گزشتہ دس سال سے بجٹ بنا رہا ہوں لیکن اب صورتحال مشکل ہے۔

ذرائع ابلاغ سے بات چیت کرتے ہوئے انہوں نے دعویٰ کیا کہ موجودہ حکومت کو کراچی اور سندھ سے کوئی دلچسپی نہیں ہے کیونکہ یہ لوگ اتفاقیہ جیت کر حکومت میں آئے ہیں۔ انہوں نے دعویٰ کیا کہ وزیراعظم نے ستمبر2018 میں کے فور پروجیکٹ کو بند کرا د یا تھا۔

احتجاج کے متعلق پارٹی فیصلے پرحکومت عمل کریگی،وزیراعلیٰ سندھ

وزیراعلیٰ سندھ کا منصب سنبھالنے سے قبل صوبائی مشیر خزانہ اور وزیرخزانہ کے مناصب پہ فرائض سرانجام دے چکنے والے گریجویٹ انجینئر سید مراد علی شاہ نے کہا کہ وفاق کی جانب سے دس دن قبل جو اعداد و شمار بتائے گئے تھے وہ آج دیے جانے والے اعداد و شمار سے یکسر مختلف تھے۔

پاکستان پیپلزپارٹی سے تعلق رکھنے والے وزیراعلیٰ سندھ نے شکوہ کیا کہ وفاق کی جانب سے سندھ کو ابھی تک کوئی رقم نہیں ملی ہے۔ انہوں نے کہا کہ وقت پہ رقم نہ ملنے کے باعث منصوبے تاخیر کا شکار ہیں۔

انہوں نے خدشہ ظاہر کیا کہ لگتا ہے کہ اس مرتبہ بھی وفاق سے 60/70 ارب روپے ملیں گے۔ ان کا کہنا تھا کہ وفاق کی جانب سے سندھ کے بجٹ میں کٹوتی کی گئی ہے۔

وزیراعلیٰ سندھ نے کہا کہ کم بجٹ ملنےکے باعث صوبے کے اخراجات پورے کرنا بہت مشکل ہیں۔

 پرانا کراچی مل گیا، جلد پرانا پاکستان بھی مل جائے گا، مراد علی شاہ

وزیراعظم عمران خان کی جانب سے قوم کے نام جاری کردہ پیغام پر تبصرہ کرتے ہوئے سید مراد علی شاہ نے کہا کہ کبھی نہیں دیکھا کہ بجٹ سے پہلے وزیراعظم ٹی وی پہ آ کر پیغام دیں۔

حکومت سندھ کے متعدد بجٹ تیار کرنے اور پیش کرنے کا تجربہ رکھنے والے سید مراد علی شاہ نے کہا کہ وفاقی حکومت کی جانب سے پیش کیے جانے والے بجٹ سے کوئی اچھی امید نظر نہیں آرہی ہے۔

صوبہ سندھ کی معاشی صورتحال کے حوالے سے وزیراعلیٰ سندھ نے کہا کہ 30 مئی کو خط بھیجا تھا کہ وفاقی حکومت نے 666 بلین روپے دینے کا وعدہ کیا تھا۔ انہوں نے بتایا کہ آج صبح 35 بلین روپے آئے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ اب مہینے کے اختتام تک وفاقی حکومت نے 174 بلین روپے دینے ہیں تاہم انہوں نے استفسار کیا کہ اگر دس دن کے اندر انہوں نے دی جانے والی رقم میں کمی کردی تو سندھ اپنا بجٹ کیسے بنا سکے گا؟

سید مراد علی شاہ کا دعویٰ تھا کہ ابھی بھی وفاق نے 140 بلین روپے مزید دینے ہیں۔

متعلقہ خبریں

ٹاپ اسٹوریز