الیکشن کمیشن نے قبائلی اضلاع میں انتخابات موخر کردیے

ممبران الیکشن کمیشن کی تعیناتی، حکومت کا قائد حزب اختلاف کو ایک اور خط

اسلام آباد: الیکشن کمیشن نے خیبرپختونخواحکومت کی درخواست منظور کرتے ہوئے قبائلی اضلاع میں 2 جولائی کو ہونے والے انتخابات 20جولائی تک موخر کردیے ہیں۔

خیبرپختونخوا اسمبلی کے قبائلی اضلاع میں انتخابات موخر کرنے کے لیے کی پی حکومت کی درخواست پر فیصلے کیلئے الیکشن کمیشن میں اہم اجلاس چیف الیکشن کمشنر سردار محمد رضا کی زیر صدارت ہوا۔

چیف سیکرٹری خیبرپختونخوا،سیکرٹری وزارت داخلہ،صوبائی الیکشن کمشنر کے پی کو بھی اجلاس میں مدعو کیا گیا ۔ اجلاس میں ملٹری آپریشنز اوروزارت دفاع  کے نمائندے بھی شریک ہوئے۔

خیبرپختونخوا حکومت نے امن وامان کی خراب صورتحال کے باعث الیکشن کمیشن کو قبائلی اضلاع میں انتخابات 20 دن تک ملتوی کرنے کی درخواست کی تھی۔

ذمہ دار ذرائع نے  ہم نیوز کو بتایا کہ انتخابات مؤخر کرنے کی درخواست پر قانونی ماہرین سے رائے لی گئی ۔ اس ضمن میں ذرائع کا کہنا ہے کہ الیکشن کمیشن کے پاس آئینی اختیار موجود ہے کہ وہ انتخابات کو مؤخر کرسکتا ہے۔

ہم نیوز کے مطابق کے پی حکومت کی جانب سے بھیجی جانے والی درخواست میں مؤقف اختیار کیا گیا  کہ اعلان کردہ عام انتخابات کو مؤخر کرانے کی درخواست اس لیے دی گئی ہے کہ امن و امان کی صورتحال مخدوش ہے اور سرحد پار کی سازشوں کی وجہ سے انتخابی سرگرمیاں متاثر ہو سکتی ہیں۔

ذرائع کا دعویٰ ہے کہ حکومتی مراسلہ میں استدعا کی گئی ہے کہ دو جولائی کو منعقد ہونے والے عام انتخابات کو25 جولائی تک ملتوی کردیا جائے۔

قبائلی اضلاع کے انتخابات میں توسیع کی درخواست

ہم نیوز کو اس ضمن میں ذمہ دار ذرائع نے بتایا ہے کہ 25 ویں آئینی ترمیم کے تحت الیکشن کمیشن آف پاکستان  25 جولائی 2019 سے قبل انتخابات کرانے کا پابند ہے۔

صوبہ خیبرپختونخوا اور سابقہ قبائلی علاقوں میں گزشتہ دنوں پیش آنے والے دہشت گردی کے واقعات نے لوگوں کو تشویش میں ضرور مبتلا کیا ہے۔

 

متعلقہ خبریں

ٹاپ اسٹوریز