سعودی عرب، پاکستان کو استحکام کا ذریعہ سمجھتا ہے۔کمانڈرفہد

سعودی عرب، پاکستان کو استحکام کا ذریعہ سمجھتا ہے۔کمانڈرفہد

کراچی: سعودی عرب کی بحریہ کے سربراہ وائس ایڈمرل فہد بن عبداللہ الغوفیلی نے کہا ہے کہ سعودی عرب، پاکستان کو خطے میں قوت و استحکام کا ذریعہ سمجھتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان اور سعودی عرب عالمی استحکام اور علاقائی امن و امان کے لیے کوشاں ہیں۔

ترجمان پاک بحریہ کے مطابق وہ پاکستان نیول اکیڈمی منوڑہ میں 111 ویں مڈشپ مین اور20 ویں شارٹ سروس کمیشن کورس کی پاسنگ آؤٹ پریڈ سے بحیثیت مہمان خصوصی خطاب کررہے تھے۔

پریڈ کے مہمان خصوصی سعودی بحریہ کے سربراہ وائس ایڈمرل فہد بن عبداللہ الغوفیلی کی پاکستان نیول اکیڈمی آمد پر چیف آف دی نیول اسٹاف ایڈمرل ظفر محمود عباسی نے ان کا استقبال کیا۔

ترجمان پاک بحریہ کے مطابق 77 مڈشپ مین اور 98 شارٹ سروس کمیشن کیڈٹس بشمول 25 خواتین کیڈٹس پاس آوٹ ہوئے ہیں۔ پاس آؤٹ ہونے والوں میں بحرین کے دو ، قطر کے سات اور سعودی عرب کے تین مڈشپ مین شامل ہیں۔

ترجمان کے مطابق مڈ شپ مین طلحہ مسعود نے اعزازی شمشیر حاصل کی۔

کمانڈر سعودی نیول فورس وائس ایڈمرل فہد بن عبداللہ نے  سے خطاب کرتے ہو ئے کہا کہ پاکستان، سعودی عرب کا سب سے قریبی دوست ہے۔ انہوں نے کہا کہ مشرق وسطیٰ اس وقت تاریخ کے مشکل دور سے گزر رہا ہے۔

سعودی عرب کی نیوی کے سربراہ نے واضح کیا کہ سعودی عرب مشرق وسطیٰ میں تمام معاملات کا پرامن تصفیہ چاہتا ہے۔

وائس ایڈمرل فہد بن عبداللہ نے پاکستان کی قربانیوں کا اعتراف کرتے ہوئے کہا کہ قیام امن کے لیے پاکستان نے بے پناہ قربانیاں دی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان نے اندرونی اور بیرونی دونوں محاذوں پر لاتعداد قربانیاں دی ہیں۔

جو اندرونی محاذ پر تھیں اور بیرونی محاذ پر بھی تھیں۔

پاک بحریہ کے ترجمان کے مطابق سعودی عرب کی بحریہ کے سربراہ نے بھی اپنی ابتدائی تربیت پاکستان نیول اکیڈمی میں حاصل کی تھی۔

پریڈ کے مہمان خصوصی وائس ایڈمرل فہد بن عبداللہ نے پاس آؤٹ ہونے والے کیڈٹس کو مبارکباد بھی پیش کی۔

متعلقہ خبریں

ٹاپ اسٹوریز