طوفانی ہواؤں نے تورغر اور شانگلہ کو ملانے والا پُل ناکارہ بنادیا

ضلع شانگلہ اورضلع تورغر کے درمیان دریائے اباسین پر بنایا گیا  پل طوفانی ہواؤں کی وجہ سے ناکارہ ہوگیا ہے جس سےدونوں اضلاع کے لوگوں کے لیے آمدورفت میں مشکلات کا سامنا ہے۔

دریائے اباسین پر بنایا گیاابلگرام پل جو دو ڈویژن کو آپس میں ملا تا ہے طوفانی ہواؤں کی وجہ سے شدید متاثر ہوا ہے۔  اس پل کی لمبائی تقریباً پانچ سو فٹ ہے۔

اس پل کی خرابی کیوجہ سے عوام کو دریا پار کرنے میں بڑی مشکلات کا سامنا ہے ، بلگرام کے مقام پرکشتی کے ذریعے سفر انتہائی خطرناک ثابت ہورہا ہے اور عوام شدید ذہنی اذیت میں مبتلا ہیں۔

مقامی لوگوں کا کہنا ہے کہ شانگلہ اور تورغر کے درمیان بہت کم فاصلے پر پل بن سکتا ہےجوحکومت کی ذمہ داری ہے، مذکورہ پل سے سی۔ پیک روڈ تھاکوٹ سے محض 30 کلو میٹر کے فاصلے پرواقع ہے۔ اس مقام پر پختہ پل بنادیا جائے تو لوگوں کی مشکلات کم ہونگی ۔

مقامی لوگوں کا مطالبہ ہے کہ اس پُل کو پختہ کر دیا جائے تو  نہ صرف دو ڈویژن میں آنے والے  سیاحوں کےلیے سفر آسان ہوجائے گا بلکہ  وہ  تورغر اور شانگلہ میں سیاحتی مقامات سے بھی لطف اندوز ہوسکیں  گے ۔ اس مقام پر پُختہ  پُل کے قیام سے علاقے میں مقامی روزگار کے مواقع بھی پیدا ہوں گے۔

یہ بھی پڑھیے: چترال اور اسکردو میں برفانی جھیلوں کے پھٹنے کا خدشہ

متعلقہ خبریں

ٹاپ اسٹوریز