منی لانڈرنگ کا ملزم عدالت میں آصف زرداری کے قدموں میں بیٹھ گیا

اسلام آباد: احتساب عدالت میں پیشی کے لیے آئے ہوئے اومنی گروپ کے عبدالغنی مجید دیر تک آصف علی زرداری کے قدموں میں بیٹھے رہے۔

ہم نیوز کے مطابق آصف علی زرداری کی  جتنی دیر بھی اومنی گروپ کے عبدالغنی مجید سے بات چیت ہوتی رہی وہ اتنی دیر تک وہ ان کے پاؤں میں بیٹھے رہے اور ان کا یہ انداز کمرہ عدالت میں موجود حاضرین کے لیے سرگوشیوں کا باعث بن گیا۔

سابق صدر پاکستان نے عدالت میں پیشی کے دوران اپنی ہمشیرہ فریال تالپور سمیت دیگر پارٹی رہنماؤں سے ملاقات کی اور مختلف امور پر تبادلہ خیال کیا۔ ملاقات کے بعد وہ عدالت سے روانہ ہو گئے۔

جعلی اکاؤنٹس کیس میں پیشی کے لیے پاکستان پیپلز پارٹی کے شریک چیئرمین آصف علی زرداری کو احتساب عدالت لایا گیا تو حکام نے اس موقع پر انتہائی سخت حفاظتی انتظامات کیے تھے۔

احتساب عدالت میں پیشی کے لیے چیئرمین پی پی پی بلاول بھٹو زرداری کی پھوپھو کو بھی احتساب عدالت میں لا یا گیا تھا جہاں ان کی اپنے بھائی آصف علی زرداری سے ملاقات ہوئی۔

اومنی گروپ: اکاؤنٹس منجمد،بینک ٹرانزیکشن جاری

احتساب عدالت کے تمام داخلی و خارجی راستوں کو سیل کر دیا گیا تھا اور کسی بھی غیر متعلقہ شخص کے احاطے میں داخلے پر پابندی عائد تھی۔

احتساب عدالت کے سابق جج ارشد ملک کی خدمات واپس کیے جانے کے بعد سے ان کی عدالت کا چارج بھی احتساب عدالت کے جج محمد بشیر کو دیا گیا ہے۔

متعلقہ خبریں

ٹاپ اسٹوریز