بختاور، آصفہ کو آصف علی زرداری سے ملنے سے روک دیا گیا

اسلام آباد: بختاور بھٹو ذرداری اور آصفہ بھٹو ذرداری کو نیب حکام نے مبینہ طور پر سابق صدر آصف علی ذرداری سے اڈیالہ جیل میں ملاقات کرنے سے روک دیا۔

بختاور بھٹو زرداری اور آصفہ بھٹو ذرداری نے اپنے ٹویٹر پیغام میں کہا کہ عدالتی احکامات کے باوجود قومی احتساب بیورو (نیب) حکام نے انہیں اپنے والد سے ملنے نہیں دیا۔ ان کا کہنا تھا کہ ملاقات کرانے سے انکار  کر کے نیب نے دراصل توہین عدالت کی ہے۔

بختاور بھٹو ذرداری نے اپنے ایک ٹویٹ میں کہا کہ حراست میں ہونے والی اموات اور عوام کا ٹیکس استعمال کرنے پر نیب کا احتساب کون کرے گا ؟

انہوں نے کہا کہ بھاگے ہوئے آمر کی بنائی ہوئی نیب کو موجودہ آمر نما شخص اپنے حریفوں کو قید کرنے کے لیے استعمال کر رہا ہے۔ بختاور بھٹو ذرداری نے الزام لگایا کہ نیب مسلسل ملکی قوانین کی خلاف ورزی کر رہا ہے۔

سابق صدر آصف علی ذرداری اور ان کی بہن اور سندھ اسمبلی کی رکن فریال تالپور مبینہ بدعنوانی کے مختلف مقدمات میں قومی احتساب بیورو کی تحویل میں ہیں۔

اس سے قبل عید قربان کی رات نیب نے فریال تالپور کو پولی کلینک اسپتال سے جیل منتقل کر دیا تھا، جس پر انہوں بھر پور احتجاج کرتے ہوئے اسے وزیر اعظم عمران خان کی حکومت کی طرف سے انتقامی کارروائی قرار دیا تھا۔

متعلقہ خبریں

ٹاپ اسٹوریز