امریکی صدر مسئلہ کشمیر پر ثالثی کیلئے میدان میں آ گئے

صدر ٹرمپ مسئلہ کشمیر پر ثالثی کیلئے میدان میں آگئے

واشنگٹن : امریکی صدرڈونلڈ ٹرمپ نے کہا ہے کہ انہوں نے مسئلہ کشمیر پر نریندر مودی اور عمران خان سے بات کی ہے۔

سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر سے جاری اپنے پیغام میں امریکی صدر نے کہا کہ پاکستان اور بھارت  سے کشمیر پر کشیدگی کم کرنےکی درخواست کی ہے اور اس حوالے سے بات چیت مثبت رہی ۔

انہوں نے کہا کہ دونوں رہنماؤں سے تجارت اور اسٹرٹیجک معاملات پر بھی ان کی بات چیت ہوئی ہے۔

صدر ٹرمپ کا کہنا تھا کہ اگرچہ دونوں ممالک کے درمیان صورتحال بہت خراب ہے لیکن ان کی گفتگو اچھی رہی ہے۔

یاد رہے امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے وزیراعظم عمران خان کے دورہ امریکہ کے دوران ہونی والی ملاقات میں مسئلہ کشمیر پر ثالثی کی پیشکش کی تھی۔

انہوں نے انکشاف کیا تھا کہ بھارتی وزیراعظم نے ایک ملاقات کے دوران مسئلہ کشمیر پر انہیں  ثالثی کا کردار ادا کرنے کا کہا۔

ٹرمپ نے کہا کہ  یہ مسئلہ طویل عرصے سے موجود ہے اور میں یہ جان کر بہت حیران بھی ہوا کہ اس خوبصورت علاقے میں روزانہ بم گرائے جاتے ہیں۔

اس موقع پر وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ اس خطے کی آبادی ایک ارب سے زائد ہے  جو مسئلہ کشمیر کی بنیاد پر یرغمال بنی ہوئی ہے، امریکہ دنیا کے طاقت ور ترین ملک کی حیثیت سے برصغیر میں امن لانے کے لیے اہم کردار ادا کرسکتا ہے۔

متعلقہ خبریں

ٹاپ اسٹوریز