راولپنڈی پولیس کو لڑکیوں سے زیادتی اور ویڈیو بنانےکے کیس میں بڑی کامیابی مل گئی

بچیوں و خواتین سے زیادتی کی ویڈیوز بنانے والے میاں بیوی گرفتار

راولپنڈی پولیس کو لڑکیوں سے زیادتی اور ویڈیو بنانےکے کیس میں بڑی کامیابی مل گئی ہے۔گرفتار میاں بیوی کے ہینڈی کیم ،ہارڈڈسک اور دیگر اشیا کو پولیس نے برآمد کرلیاہے۔

سی پی او راولپنڈی فیصل رانا نے ہم نیوز سے گفتگو میں کہا کہ ملزمان سے برآمدکی گئی  اشیا کو فرانزک آڈٹ کیلئے پنجاب لیب بھیج دیا ہے۔میاں بیوی پر مشتمل گینگ سے متاثرہ دیگر افراد کے نام صیغہ راز میں رکھیں گے۔

انہوں نے کہا کہ کیس کی تحقیقات میں ایف آئی اے اور قانونی ماہرین سے بھی مدد لی جا رہی ہے۔ ملزم قاسم انتہائی شاطرہے۔ٹرانسکرپٹ اورڈیٹا ڈیلیٹ کردیتا تھا اوراس نے ویڈیوزبھی مختلف اینگل سے بنائیں۔

فیصل رانا نے کہا کہ واہ کینٹ میں شہید اے ایس آئی کے قاتل سمیت 21 فروری کو پولیس اہلکاروں کے قتل میں ملوث مرکزی ملزم کو بھی پکڑ لیا ہے۔ملزم کا تعلق کسی کالعدم تنظیم سے ہے یا نہیں ابھی کچھ نہیں کہا جا سکتا۔

واضح رہے کہ کم عمر بچیوں اور شادی شدہ خواتین کو زیادتی کا نشانہ بنانے اور ان کی ویڈیوز و تصاویر بنانے والے سفاک میاں بیوی کو تھانہ سٹی پولیس نےچند روز قبل  گرفتار کرکے اخلاق باختہ ویڈیوز اور ہزاروں تصاویر برآمد کیں۔

عدالت نے ملزم خاوند قاسم کا جسمانی اور ملزمہ بیوی کرن محمود کا جوڈیشل ریمانڈ 16اگست کو منظور کیا تھا۔

ہم نیوز کے مطابق ملزم قاسم نے ایم ایس سی کی شادی شدہ طالبہ کو زیادتی کا نشانہ بنایا تھا جس کی اس کی اہلیہ کرن محمود نے اخلاق باختہ ویڈیو اور تصاویر بنائی تھیں۔

راولپنڈی: کم سن بچیوں سے زیادتی کرنے والا ملزم گرفتار

پولیس نے اس ضمن میں ملنے والی شکایت پر ملزمان کو جب گرفتار کیا تو انتہائی چونکا دینے والے انکشافات سامنے آئے ہیں۔

ملزمان نے دوران تفتیش انکشاف کیا کہ وہ کم عمر بچیوں کو اغوا کرتے تھے جس کے بعد ملزم قاسم بچیوں کو زیادتی کا نشانہ بناتا تھا۔ اس دوران اس کی اہلیہ کرن محمود بھیانک فعل کی موبائل فون سے ویڈیو اور تصاویر بناتی تھی۔

پولیس کو ملزم قاسم نے بتایا کہ وہ اپنی اہلیہ کے ذریعے بچیوں کو ورغلاتا تھا اورپھر زیادتی کا نشانہ بناتا تھا۔ ملزم نے اعتراف کیا ہے کہ اس نے اب تک 45 لڑکیوں کو زیادتی کا نشانہ بنایا ہے۔

شیطان صفت میاں بیوی زیادتی کا نشانہ بنانے کے بعد بچیوں کی برہنہ ویڈیوز اور تصاویر بھی بناتے تھے۔ پولیس نے اب تک کی تفتیش و تحقیق میں ملزمان کے قبضے سے دس انسانیت سوز واقعات کی ویڈیوز اور ہزاروں تصاویر برآمد کی ہیں۔

بچیوں و خواتین سے زیادتی کی ویڈیوز بنانے والے میاں بیوی گرفتار

متعلقہ خبریں

ٹاپ اسٹوریز