جمشید انصاری کو مداحوں سے بچھڑے 14 برس بیت گئے

ٹیلی ویژن اور فلم کے مزاحیہ اداکار جمشید انصاری کو اپنے مداحوں سے بچھڑے 14 برس بیت گئےہیں لیکن جمشید انصاری کی اداکاری اور ان کے مکالمے آج بھی ان کے مداحوں کے دلوں پر راج کر رہے ہیں ۔

مزاحیہ اداکار جمشید انصاری31 دسمبر 1942 کو ہندوستان میں پیدا ہوئے۔ گریجوایشن کے بعد جمشیدانصاری لندن میں برطانوی نشریاتی ادارے بی بی سی سے منسلک رہے ۔

لندن میں قیام کے دوران انہوں نے شوکت تھانوی کے لکھے ہوئے ڈرامے ’ سنتا نہیں ہوں بات‘ پیش کیا۔سن 1968 میں پاکستان واپس آکر پاکستان ٹیلی وژن میں کام کا آغاز کیا۔

انہوں نے اپنے کریئر کا آغاز ڈراما ’ جھروکے‘ سے کیا جس نے جمشید انصاری کی لاجواب اداکاری کے سبب مداحوں سے خوب داد سمیٹی ۔

جمشید انصاری کے شہرہ آفاق ڈراموں میں گھوڑا گھاس کھاتا ہے، کرن کہانی، ان کہی، تنہائیاں، زیر زبر پیش،شوشہ، وغیرہ شامل ہیں۔

ورسٹائل فنکارجمشید انصاری کو ان کی پیشہ ورانہ صلاحیتوں پر درجنوں ایوارڈ زسے بھی نوازا گیا۔

اپنے مداحوں کے دلوں پر راج کرنے والے جمشید انصاری 24 اگست 2005 کو کراچی میں خالق حقیقی سے جا ملےلیکن ڈراموں کے دنیا میں پیش کردہ کرداروں کو ہزاروں مداح یاد کرتےہیں ۔

یہ بھی پڑھیے: رنگیلا کو مداحوں سے بچھڑ ے 14 برس  بیت گئے

متعلقہ خبریں

ٹاپ اسٹوریز