مرکزی بینک کی طرف سے مختلف بینکوں پر 21لاکھ ڈالر سے زائد جرمانہ

کراچی: اسٹیٹ بینک نےشیڈ ول فور میں شامل زیر نگرانی افراداور ان سے منسلک لوگوں کے کھاتے کھولنے اور پرانے کھاتے منجمد نہ کرنے پر مختلف بینکوں پر ا کیس لاکھ ڈالر سے زائدجرمانےعائد کردیے۔

ذرائع کے مطابق اسٹیٹ بینک نے رواں سال اب تک مختلف بینکوں پر 21 لاکھ ڈالر سے زائد جرمانے عائد کئے ۔ان میں دس کمرشل اور مائیکرو فنانس بینک شامل ہیں۔

ذرائع کا کہناہے کہ ان بینکوں پر شیڈول فور میں شامل زیر نگرانی افراد اور ان سے منسلک لوگوں کے کھاتے کھولنے پر جرمانے لگائے گئے۔ ان بینکوں پر یہ الزام بھی ہے کہ انہوں  نے مشکوک افراد کے پہلے سے موجود اکائونٹس بھی منجمد نہیں کئے۔

گزشتہ سال 8 بینکوں پر 34لاکھ ڈالر کے جرمانے عائد کئے گئے تھے۔ رواں سال کمرشل اور مائیکرو فنانس بینکوں نے اپنے 168ملازمین کے خلاف ڈسپلنری ایکشن بھی لیا  ہے۔

ذرائع کے مطابق ملک میں  دہشت گرد عناصر کی مالی معاونت روکنے کے لئے اقدامات جاری ہیں۔ حکومت دہشت گردوں کی مالی معاونت کا راستہ روکنے کے لئے سرگرم عمل ہے۔مرکزی بینک کیطرف سے مشکوک افراد کی مالی سرگرمیوں پر کڑی نظر رکھی جارہی ہے ۔

یہ بھی پڑھیے: دہشت گردوں کے معاونین کے خلاف کارروائی تیز، ایف اے ٹی ایف میں رپورٹ پیش

متعلقہ خبریں

ٹاپ اسٹوریز