’محسن عباس ذہنی مریض ہے‘

لاہور کی فیملی کورٹ میں ماڈل فاطمہ سہیل کی شوہر محسن عباس سے خلع کی درخواست پر سماعت ہوئی۔

جج بابر عدیم کی عدالت میں ہونے والی سماعت کے دوران فاطمہ سہیل نے اپنی درخواست میں مؤقف اختیار کیا کہ ان کا شوہر محسن عباس ذہنی مریض ہے جوکہ ان کی دیکھ بھال نہیں کرسکتا۔

درخواست گزار کے مطابق محسن عباس ایک لالچی انسان ہے جو کہ مجھ سے پیسے چھیننا چاہتا ہے۔

فاطمہ سہیل کا درخواست میں کہنا تھا کہ محسن عباس نے میری زندگی برباد کردی اس کے ساتھ مزید زندگی نہیں گزار سکتی۔

انہوں نے عدالت سے استدعا کی کہ ان کی درخواست منظور کرتے ہوئے خلع کی ڈگری جاری کی جائے۔

عدالت نے محسن عباس کو نوٹس جاری کرتے ہوئے طلب کرلیا اور کیس کی سماعت 17 ستمبر تک ملتوی کردی۔

خیال رہے کہ گزشتہ ہفتے محسن عباس اور اہلیہ کے درمیان تنازع سے متعلق کیس کی سماعت کے دوران پولیس نے تفتیشی رپورٹ پیش کی تھی جس میں اداکار کو قصور وار قرار دیا گیا۔

تفتیشی افسر کی رپورٹ کی بناء پر محسن عباس کے وکلاء نے درخواست ضمانت واپس لے لی۔

تفتیشی افسر کا کہنا تھا کہ اداکار کے خلاف تھانہ ڈیفنس سی نے ان کی اہلیہ فاطمہ کی درخواست پر مقدمہ درج کیا۔

تفتیشی افسر کے مطابق محسن عباس پر امانت میں خیانت اور اپنی بیوی فاطمہ کو سنگین نتائج کی دھکمیوں کے متعلق مقدمے درج کیا گیا۔

متعلقہ خبریں

ٹاپ اسٹوریز