اسلام آباد میں نئے ٹریفک قوانین متعارف کرانے کا فیصلہ

اسلام آباد: وفاقی دارالحکومت میں بین الاقوامی سطح کے نئے ٹریفک قوانین متعارف کرانے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔

متعارف کرائی جانے والی نئی پالیسی کے مطابق گاڑی چلاتے ہوئے سگریٹ نوشی کرنے پر چالان ہو گا، تین بار چالان کے بعد ڈرائیونگ لائسنس معطل کر دیا جائے گا جبکہ اگلی نشست پر بیٹھے دونوں افراد کے لیےسیٹ بیلٹ باندھنا لازمی قرار دے دیا جائے گا۔

ڈرائیونگ لائسنس کے بغیر گاڑی چلانے پر بھی پابندی عائد کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔

ٹریفک قوانین سے متعلق نئی ڈرائیونگ پالیسی متعارف کرانے کا فیصلہ وزیر داخلہ اعجاز شاہ کی زیر صدارت اجلاس میں کیا گیا۔

نئی پالیسی میں جو ترامیم لائی جائیں گی ان میں بغیر کسی وجہ کے ٹریفک جام پر سپرٹنڈنٹ پولیس (ایس پی) اور ڈیوٹی افسر کے خلاف کارروائی کا فیصلہ شامل ہے۔ اکثر اوقات ٹریفک افسران ٹریفک جام کے وقت غائب ہوتے ہیں۔

اس ضمن میں ایڈیشنل سیکرٹری ون اور ٹو چیف کمشنر اور انسپکٹر جنرل (آئی جی) سے میٹنگ کریں گے۔

میٹنگ کے دوران نئی پالیسی پر ایک ہفتے کے اندر عمل درآمد شروع کرنے کا حکم دیا گیا ہے، اس کے علاوہ سوشل میڈیا مہم بھی شروع کرنے کی ہدایت جاری کی گئی ہے۔

ان تمام احکامات پر عمل درآمد کے لیے حکام بالا کی جانب سے 30 ستمبر کی ڈیڈ لائن دی گئی ہے۔

متعلقہ خبریں