طیب اردوان کے قریبی ساتھی نے اپنی پارٹی بنانے کا اعلان کردیا

طیب اردوان کے قریبی ساتھی نے اپنی پارٹی بنانے کا اعلان کردیا

فائل فوٹو

اسلام آباد: ترکی کے سابق وزیراعظم اور صدر رجب طیب ایردوان کے پرانے حلیف علی باباکن نے اپنی نئی سیاسی جماعت بنانے کا اعلان کردیا ہے۔

خبر رساں ادارے رائٹرز کے مطابق علی باباکن نے ایک انٹرویو میں بتایا کہ وہ رواں سال کے آخر میں نئی سیاسی جماعت کا اعلان کریں گے۔

پریس کانفرنس کے دوران ان کا کہنا تھا کہ نئی جماعت بنانے کے لیے ابھی کچھ وقت درکار ہے اور وہ چاہتے ہیں کہ 2020 سے قبل نئی سیاسی جماعت کے خدوخال سامنے آ جائیں۔

انہوں نے رواں سال جولائی میں اختلافات کے سبب طیب اردوان کی پارٹی سے استعفیٰ دے دیا تھا۔

ایردوان حکومت میں علی باباکن وزارت عظمیٰ سمیت وزیر خارجہ اور وزیر برائے اقتصادی امور کے عہدوں پر بھی فائز رہ چکے ہیں۔ وہ 2009 سے 2015 تک ترکی کے نائب وزیر اعظم بھی رہے۔

مقامی میڈیا میں کافی عرصے سے پیش گوئیاں کی جارہی تھیں کہ علی باباکن اور ترکی کے سابق صدر عبداللہ گل نئی سیاسی جماعت بنانے جا رہے ہیں۔

خبردار ذرائع کا کہنا ہے کہ استنبول کے بلدیاتی انتخابات میں حکمراں جماعت کی شکست کے بعد ان کوششوں کو مزید تیز کردیا گیا تھا۔

علی باباکن ماضی میں یہ الزام بھی لگا چکے ہیں کہ طیب اردوان کی پارٹی اپنے بنیادی اصولوں سے پیچھے ہٹ گئی ہے۔

دوسری جانب ترک صدر رجب طیب ایردوان نئی جماعت سے متعلق خبروں کی تردید کرتے ہوئے کہا کہ انہوں نے اے کے پارٹی کے اراکین کو تنبیہ کی ہے کہ جو بھی پارٹی چھوڑے گا اس کے لیے واپسی کے دروازے بند ہوں گے۔

متعلقہ خبریں

ٹاپ اسٹوریز