اسلام آباد لاک ڈاؤن: وزیر داخلہ کا مولانا فضل الرحمان کو کنٹینر دینے کا اعلان

سرگودھا۔ وفاقی حکومت نے اسلام آباد میں اکتوبر میں ہونے والے احتجاج کے دوران جمیت علمائے اسلام ف کے سربراہ مولانا فضل الرحمان کو کنٹینر فراہم کرنے کا اعلان کردیا۔

سرگودھا میں ذرائع ابلاغ کے نمائندوں سے گفتگو کرتے ہوئے وزیر داخلہ اعجاز شاہ نے کہا کہ حکومت احتجاج کے دوران مولانا فضل الرحمان کو کنٹینر فراہم کریگی۔

صحافی نے جب سوال پوچھا  کہ کیا حکومت فضل الرحمان کو احتجاج کے لیے کنٹینر دیگی، وزیر داخلہ نے صحافی سے پوچھا  کیا آپ کنٹینر دیتے۔ صحافی نے کہا کہ اگر میرے اختیار میں ہوتا تو دے دیتا۔  اعجاز شاہ نے کہا  ٹھیک ہے ہم بھی دے دینگے۔

جمیت علمائے اسلام ف کے سربراہ نے دیگر حزب اختلاف کی جماعتوں سے ملکر اکتوبر میں اسلام آباد میں احتجاج کرنے کا اعلان کر رکھا ہے۔

ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ سابق وزیراعظم نواز شریف سے ڈیل کے حوالے انہیں کچھ نہیں معلوم ہے۔ وہ نیب کے قیدی ہیں وہی ان کا فیصلہ کریگی، میں کروں گا اور نہ ہی وفاقی کابینہ۔

یہ بھی پڑھیں: اسلام آباد لاک ڈاؤن: جے یو آئی ف کی حکمت عملی کی تفصیلات سامنے آ گئیں

وزیر داخلہ نے کہا کہ موجودہ حکومت نے مسئلہ کشمیر کو جس طرح  سفارتی سطح پر اٹھایا ہے کسی حکومت نے  پہلے کبھی نہیں اٹھایا۔ 1964 کے بعد پہلی مرتبہ مسلٔہ کشمیر کو اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل میں  اٹھایا گیا۔

ان کا کہنا تھا کہ پوری دنیا میں مسئلہ  کشمیر کو اٹھایا گیا ہے،اس سے بہتر طریقے سے اس مسئلہ کو نہیں اٹھایا جا سکتا۔ کشمیر ہماری شہ رگ ہے یہ میں نہیں قائد اعظم محمد علی جناح  نے کہا تھا۔
ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ کشمیر کا سودا کرنے کی باتیں بالکل غلط ہیں، جن لوگوں نے اس کا سودا  کرنا تھا اللہ نے انہیں ہی جیل بھیج دیا۔

متعلقہ خبریں

ٹاپ اسٹوریز