‘بلاول چاہتے ہیں دھرنا مولانا دیں اور وہ بلٹ پروف گاڑی سے اتر کو کرسی پر بیٹھ جائیں’

 وزیراعظم کی معاون خصوصی برائے اطلاعات و نشریات ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان  نے کہا ہے کہ بلاول  بھٹو زرداری چاہتے ہیں کہ دھرنا مولانا فضل الرحمان اور مدارس کے بچے دیں اور وہ بلٹ پروف گاڑی سے اتر کو کرسی پر بیٹھ جائیں۔

اپنے ایک ٹویٹ میں انہوں نے کہا کہ  بلاول کے بیان کا مطلب ہے  ’’جاگدے رہنا، ساڈے تے نہ رہنا‘‘۔

اس سے قبل جامشورو میں ذرائع ابلاغ کے نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے بلاول بھٹو نے کہا تھا کہ جمیعت علمائے اسلام ف کے سربراہ مولانا فضل الرحمان اسلام آباد میں ہوں گے جبکہ  وہ ملک کا دورہ کریں گے۔

ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان نے کہا کہ انہوں نے پہلے  بھی کہا تھا کہ  حزب اختلاف آپس میں سیاست کر رہی ہے، اپوزیشن کو خود اپوزیشن سے خطرہ ہے۔

یہ بھی پڑھیں: اسلام آباد لاک ڈاؤن: وزیر داخلہ کا مولانا فضل الرحمان کو کنٹینر دینے کا اعلان

مولانا فضل الرحمان کو مخاطب کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ موروثی سیاست اور مال بچاؤ پارٹیاں آپ کو قربانی کا بکرا بنانے کی سازش کررہی ہیں۔

معاون خصوصی نے کہا کہ بلاول ملک کا دورہ کرنے کے بجائے کراچی کا دورہ کرکے وہاں پھیلے کچرے کی صفائی پر توجہ دیں۔ بدقسمتی ہے کہ وسائل سندھ کے غریب عوام تک نہیں پہنچ رہے۔

ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان نے کہا کہ جب تک موجودہ پیپلز پارٹی سندھ میں مسلط ہے، سندھ اور اس کے عوام کا بھلا ممکن نہیں۔

بلاول کو مخطب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ وزیراعظم عمران خان کشمیریوں کے سفیر کے طور پر دنیا بھر میں مظلوموں کا مقدمہ لڑ رہے ہیں۔  وزیر اعظم جمعہ کے روز کشمیریوں کے حق کی آواز بلند اور بھارتی ظلم و جبر کو بے نقاب کریں گے، یہ وقت قوم کو تقسیم نہیں یکجا کرنے کا ہے۔

متعلقہ خبریں

ٹاپ اسٹوریز