میئر اسلام آباد کا وفاقی حکومت کے خلاف عدالت جانے کا فیصلہ

وفاقی پولیس کے تین اہلکار منشیات فروشی میں ملوث

فائل فوٹو

اسلام آباد: شہر اقتدار کے بلدیاتی ادارے کو اختیارات نہ ملنے کا معاملے پر مئیر اسلام آباد شیخ انصر نے وفاقی حکومت کے خلاف سپریم کورٹ سے رجوع کرنے کا فیصلہ کرلیا۔

مئیر اسلام آباد کی طرف سے سینئر ایڈووکیٹ احمد نواز نے درخواست دائر کردی جس میں مؤقف اختیار کیا گیا ہے کہ میٹروپولیٹن کارپوریشن کو 2017 میں وزارت داخلہ نے باضابطہ اختیارات دینا تھے۔

درخواست میں کہا گیا ہے کہ ایم سی آئی کو لوکل گورنمنٹ ایکٹ 2015  کے مطابق اب تک اختیارات نہیں دیے گئے۔

جو ادارے ضلعی انتظامیہ اور کیپیٹل ڈیویلپمنٹ اتھارٹی (سی ڈی اے) سے میٹروپولیٹن کارپوریشن اسلام آباد (ایم سی آئی) کو منتقل ہوئے اس میں مداخلت کی جارہی ہے۔

درخواست گزار کا مؤقف ہے کہ سی ڈی اے اور ضلعی انتظامیہ کی جانب سے انتظامی امور میں مداخلت کو روکا جائے، عدالت سے درخواست ہے کہ ایم سی آئی کو مکمل اختیارات اور انتظامی کنٹرول فراہم کیا جائے۔

درخواست میں مزید کہا گیا کہ ادارے میں ملازمین کے تبادلوں، تقرریوں اور فنڈز کا مکمل اختیار دیا جائے۔

متعلقہ خبریں

ٹاپ اسٹوریز