وزیر اعظم عمران خان سعودی عرب پہنچ گئے

'ٹرمپ کا افغان امن معاہدے سے پیچھے ہٹنا تکلیف دہ ہے'

فائل فوٹو

اسلام آباد: وزیراعظم پاکستان عمران خان سعودی ولی عہد محمد بن سلمان کی دعوت پر دو روزہ سرکاری دورے پر جدہ پہنچ گئے ہیں۔

مشیرخزانہ عبدالحفیظ شیخ اورمعاون خصوصی برائےسمندر پار پاکستانی ذوالفقاربخاری بھی وزیراعظم کے ہمراہ ہیں۔ جدہ کے رائل ٹرمینل پر گورنرمکہ نے وزیراعظم عمران خان کا استقبال کیا.

دفتر خارجہ کی جانب سے جاری ہونے والے بیان کہا گیا ہے کہ عمران خان سعودی قیادت سے مقبوضہ کشمیر کی صورت حال پر بات چیت کریں گے۔

بیان کے مطابق وزیراعظم بھارت کے غیر قانونی اقدام پر سعودی ولی عہد محمد بن سلمان سے مسلسل رابطے میں ہیں۔

اطلاعات ہیں کہ عمران خان سعودی عرب سے ہی اقوام متحدہ کے اجلاس میں شرکت کے لیے امریکہ جائیں گے۔

یہ بھی جانیں: وزیراعظم عمران خان کا سعودی ولی عہد سے ٹیلی فونک رابطہ

سفارتی ذرائع کا کہنا ہے کہ وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی، مشیر خزانہ عبدالحفیظ شیخ اور مشیر تجارت عبدالرزاق داؤد بھی عمران خان کے ہمراہ ہوں گے۔

خیال رہے کہ عمران خان نے رواں ماہ میں اب تک دو بار سعودی ولی عہد محمد بن سلمان سے ٹیلی فون پر رابطہ کیا ہے۔

گزشتہ روز وزیراعظم نے سعودی آئل کی تنصیبات پرحملے کی مذمت کی کرتے ہوئے کہا تھا کہ پاکستان مشکل وقت میں اپنے مسلم ملک بھائی کے ساتھ کھڑا ہے۔

ٹیلی فون پر بات کرتے ہوئے پاکستان کے وزیراعظم نے کہا کہ سعودی عرب کے امن اورعالمی معیشت کونشانہ بنانے کی ہرکوشش سے مقابلہ کیا جائے گا۔

قبل ازیں عمران خان نے 3 ستمبر کو بھی محمدبن سلمان سے ٹیلی فون پر بات کی اور کشمیر کی سنگین صورتحال سے آگاہ کیا۔

یاد رہے کہ وزیر اعظم عمران خان کا یہ تیسرا دورہ سعودی عرب ہے۔ وہ اس سے قبل وزارت عظمیٰ کا عہدہ سنبھالنے کے بعد 2 بار سعودی عرب کا دورہ کرچکے ہیں۔

متعلقہ خبریں

ٹاپ اسٹوریز