رواں سال اب تک 1304 بچے جنسی تشدد کا نشانہ بن چکے،رپورٹ

'جنوری سے جون تک 2322 بچے جنسی تشدد کا شکار' | humnews.pk

لاہور:ایک غیر سرکاری تنظیم کی طرف سے جاری رپورٹ میں انکشاف کیا گیاہےپاکستان میں سال 2019 کے دوران اب تک تیرہ سو چار بچوں کو جنسی تشدد کا نشانہ بنایا جا چکا ہے ۔
غیر سرکاری تنظیم ساحل کی جانب سے بچوں پر ہونے والے جنسی تشدد کی رپورٹ  میں بتایا گیاہے کہ جنسی تشدد کا نشانہ بننے والوں میں ساتھ سو انتیس بچیاں جبکہ پانچ سو پچہتر بچے جنسی تشدد کا شکار ہوئے ۔

رپورٹ میں کہا گیاہے کہ رواں برس روزانہ 7 سے زائد بچے جنسی تشدد کا شکار ہوئے ،کم عمری میں شادی کے چالیس واقعات پیش آئے جبکہ ایک بچی کو ونی بھی کیا گیا۔ 12 بچوں اور بچیوں کو مدرسے میں جنسی تشدد کا نشانہ بنایا گیا۔

رپورٹ کے مطابق رواں برس جنسی تشدد کا شکار بننے والے بچوں کی سب سے زیادہ تعداد پنجاب کی ہے۔پنجاب میں چھ سو باون سندھ میں چار سو اٹھاون بچوں کو جنسی تشدد کا نشانہ بنایا گیا۔بلوچستان میں 32 جبکہ اسلام آباد میں نوے بچوں کو جنسی تشدد کا نشانہ بنایا گیا۔

خیبرپختونخوا میں اکیاون ، آزاد کشمیر میں اٹھارہ اور گلگت بلتستان میں تین بچوں کو جنسی تشدد کا نشانہ بنایا گیا۔گیارہ سو پینتالیس واقعات پولیس میں رپورٹ ہوئے جبکہ 38 واقعات پولیس نے رپورٹ ہی نہ کیے۔ رواں برس صوبائی دارالحکومت لاہور میں پچاس بچے جنسی تشدد کا شکار ہوئے۔

یہ بھی پڑھیے: قصور واقعہ : وزیراعلی پنجاب نے لاہور ائر پورٹ پر ہی اجلاس طلب کرلیا

متعلقہ خبریں

ٹاپ اسٹوریز