پاکستان میں زلزلہ: 26 افراد جاں بحق، 300 سے زائد زخمی

اسلام آباد: آزادکشمیر اور پنجاب کے اکثر علاقوں میں منگل کی دوپہر آنے والے زلزلے سے 26افرادجاں بحق اور 300 سےزائد زخمی ہو گئے ہیں۔

وزیراعظم آزادکشمیر راجہ فاروق حیدر کو پیش کی گئی ابتدائی رپورٹ کے مطابق زلزلے سے جاتلاں، پل منڈی، چیچیاں اور ضلع میر پور کے متعدد علاقوں کو نقصان پہنچا ہے۔

رپورٹ کے مطابق زلزلے سےنہراپر جہلم میں دو شگاف پڑے جس کاپانی قریبی آبادیوں میں داخل ہو گیا اور جاتلاں کے قریب نہر پر قائم دو پل بھی ناکارہ ہو چکے ہیں۔

پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ کے مطابق زلزلے سے ایک فوجی اہلکار بھی  ہلاک ہوا ہے۔

پاک فوج کے ترجمان میجر جنرل آصف غفور نے اپنے ٹوئٹر پیغام میں کہا ہے کہ چیف آف آرمی اسٹاف جنرل قمر جاوید باجوہ نے فوری ریسکیو آپریشن کا حکم دے دیا۔

انہوں نے بتایا کہ جنرل قمر جاوید باجوہ نے فوجی دستوں کو آزاد کشمیر میں سول انتظامیہ کی فوری اعانت کا حکم دیا ہے۔

چیئرمین این ڈی ایم اے نے بتایا کہ ‏ہمارے لوگ جہلم میں پہنچ چکے ہیں جبکہ میرپور بھی پہنچ رہے ہیں۔

انہوں نے بتایا کہ زلزلے کا مرکز جہلم اور میرپور کا علاقہ تھا، جن علاقوں میں زیادہ نقصان ہوا ہے وہ دور دراز کے علاقے نہیں ہیں۔

زلزلہ پیما مرکز کے مطابق زلزلے کی شدت ریکٹر اسکیل پر5.8 ریکارڈ کی گئی جبکہ اس کی گہرائی 10 کلومیٹر زیر زمین تھی۔

زلزلہ پیما مرکز نے مزید بتایا کہ زلزلے کا مرکز جہلم سے پانچ کلومیٹر شمال میں تھا۔

اسلام آباد کے علاوہ لاہور، پشاور، مری، جہلم، کالا باغ، حافظ آباد، چینیوٹ، پری پور اور دیگر علاقوں میں بھی شدید جھٹکے محسوس کیے گئے۔

اس کے علاوہ پنڈی بھٹیاں، لالیاں، فیصل آباد، سرگودھا ، منڈی بہاءالدین، جڑانوالہ، حاصل پور، شاہپور، سلانوالی، ٹیکسلا، شرقپور شریف، عیسٰی خیل، وزیرآباد سمیت دیگر کئی علاقوں سے زلزلے کے جھٹکے محسوس کیے جانے کی اطلاعات موصول ہوئیں۔

زلزلے کے نتیجے میں لوگ کلمہ طیبہ کا ورد کرتے گھروں سے باہر نکل آئے۔ پاکستان کے علاوہ نئی دہلی سمیت بھارت میں بھی زلزلے کے جھٹکے محسوس کیے گئے۔

دوسری جانب وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار نے پی ڈی ایم اے حکام کو الرٹ رہنے کی ہدایت کردی ہے۔

عثمان بزدار نے لاہور سمیت پنجاب کے مختلف اضلاع میں زلزلے کے بارے میں رپورٹ طلب کرلی ہے۔

انہوں نے ہدایت دی ہے کہ سرکاری اور نجی عمارتوں کی صورتحال کا جائزہ لیا جائے۔

ان کا کہنا ہے کہ مختلف اضلاع میں زلزلے کے بعد ممکنہ نقصانات کے بارے میں مکمل آگاہی حاصل کی جائے۔

عثمان بزدار نے مزید کہا کہ پی ڈی ایم اے زلزلے کے ممکنہ آفٹر شاکس کے پیش نظر پیشگی اقدامات یقینی بنائیں۔

متعلقہ خبریں