ٹرمپ کا احتساب: عوامی حمایت بھی مل رہی ہے، نینسی پلوسی کا دعویٰ

کورونا: ٹرمپ نے نیویارک کو آفت زدہ قرار دے دیا

فوٹو: فائل

واشنگٹن: امریکی ایوان نمائندگان کی اسپیکر نینسی پلوسی نے دعویٰ کیا ہے کہ صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے مواخذے کے لیے عوامی حمایت بھی مل رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ صدر پر لگنے والے الزام کے بعد انتظامیہ کے رویے نے بھی عوامی رائے عامہ پر اثر ڈالا ہے۔

عالمی خبررساں ایجنسی کے مطابق اسپیکر نینسی پلوسی نے اس ضمن میں حتمی تاریخ نے نہیں دی ہے تاہم ان کا کہنا ہے کہ انٹیلی جنس کمیٹی دستیاب ثبوت و شواہد کا جائزہ لے رہی ہے، حقائق کی جانچ پڑتال میں مصروف ہے جس کے بعد وہ اپنی رپورٹ پیش کرے گی اور پھراس کی روشنی میں مزید پیشرفت ممکن ہوسکے گی۔

ٹرمپ کا بھی احتساب ہوگا:نینسی نے اعلان کیا تو صدر نے ہراساں کیے جانے کا الزام لگادیا

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ پر الزام ہے کہ انہوں نے یوکرین کے صدر پر دباؤ ڈالا تھا کہ وہ سابق امریکی صدر جو بائیڈن کے خلاف تفتیش کریں جنہوں نے یوکرین کی گیس کمپنی میں اپنے بیٹے کو بھاری معاوضے پر ملازمت دلوائی تھی۔ جو بائیڈن نے عائد کردہ الزامات سے صاف انکار کیا ہے۔

دلچسپ امرہے کہ جوبائیڈن آئندہ سال امریکہ میں ہونے والے صدارتی انتخابات میں صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے مدمقابل مضبوط امیدوار تصور کیے جاتے ہیں۔ وہ ڈیموکریٹک پارٹی کے ٹکٹ پر امیدوار ہوسکتے ہیں۔

امریکی ایوان نمائندگان کی اسپیکر نینسی پلوسی نے گزشتہ ہفتے ہی صدر ٹرمپ کے خلاف احتساب کی کارروائی شروع کرنے کا اعلان کیا تھا وگرنہ اس سے قبل وہ اس اقدام کی حمایت نہیں کررہی تھیں۔ صدر کے مواخذے کے لیے ایوان نمائندگان میں ڈیموکریٹک اراکین کافی عرصے سے کوشش کررہے تھے۔

امریکی صدارتی انتخابات میں روسی مداخلت:ملر کی تحقیات مکمل

امریکی تاریخ میں کسی بھی صدر کو مواخذے کے ذریعے اس کے منصب سے ہٹایا نہیں جا سکا ہے۔ رچرڈ نکسن واحد صدر تھے جنہوں نے اپنے مواخذے کا سامنا کرنے کے بجائے عہدے سے استعفیٰ دے دیا تھا۔

امریکی صدرٹرمپ پر الزام ہے کہ انہوں نے ایک دوسرے ملک کے صدر پر دباؤ ڈالا کہ وہ انہیں سیاسی فائدہ پہنچائیں وگرنہ ان کے ساتھ جاری فوجی تعاون ختم کردیا جائے گا۔ صدر پر 2016 میں ہونے والے صدارتی انتخابات میں بھی روس سے مدد لینے کا الزام تھا۔

روس کی حمایت لینے کے الزام کی تحقیقات کے لیے رابرٹ ملر کو مقرر کیا گیا تھا جنہوں نے اپنی پیش کردہ رپورٹ میں کہا تھا کہ صدر ٹرمپ نے تحقیقات کے راستے میں رکاوٹیں ڈالیں۔

امریکی صدر ٹرمپ کی ’تنبیہ‘ پر روسی صدر پیوٹن کی مسکراہٹ

امریکی قوانین کے تحت کانگریس کو یہ حق حاصل ہے کہ وہ موجودہ صدر کوایک وضع کردہ طریقہ کار پرعمل پیرا ہوکر عہدے سے برطرف کردے۔

متعلقہ خبریں

ٹاپ اسٹوریز