کےپی اسمبلی میں حکومت اور اپوزیشن کے ایکدوسرے پر الزامات

پشاور:خیبرپختونخوا اسمبلی میں صحت اصلاحات بل کے معاملے پر حکومت اور اپوزیشن ایک دوسرے پر خوب الزامات لگائے۔ اپوزیشن رہنماؤں نے کہا کہ  امریکہ میں بیٹھا شخص لیپ ٹاپ پر صوبہ چلارہا ہے۔ جواب میں حکومت نے کہا وہ شخص ہم سب سے زیادہ کام کررہا ہے۔

خیبرپختونخوا میں محکمہ صحت میں اصلاحات کے معاملے پر صوبائی اسمبلی میں  حکومت اور اپوزیشن کے مابین دلچسپ اور گرماگرم بحث  ہوئی۔

اپوزیشن لیڈر نے اکرم درانی الزام عائد کیا کہ ایک شخص ملک سے باہر بیٹھ کر لیپ ٹاپ پر صوبہ چلا رہا ہے جس نے محکمہ صحت کی نیا ڈبونے میں کوئی کسر نہیں چھوڑی جس پر حکومت نے جواب دیا کہ وہی شخص پاکستان اپنے خرچے پر آکر سب سے زیادہ کام کرتا ہے۔

یہی نہیں اپوزیشن رکن نگہت اورکزئی نے بھی حکومت پر نہ صرف تنقید کے نشتر برسائے بلکہ ان کی تقریر کے دوران حکومتی اراکین کا شور کرنے پر ہاضمے کے لیے ہاجمولا لانے کی پیشکش بھی کردی۔

اجلاس میں حکومت کی جانب سے ٹوورازم اتھارٹی بل، اسپیشل پولیس فورس کی مستقلی کے  بل بھی منظور کرلیے گئے۔  رکن  صوبائی اسمبلی مومنہ باسط کی جانب سےوزیراعظم عمران خان کو اقوام عالم کے سامنے بہترانداز میں مقدمہ پیش کرنے پر پیش کی گئی قرارداد کو بھی کثرت رائے سے منظور کرلیا گیا۔

یہ بھی پڑھیں:خورشید شاہ کی گرفتاری پر کے پی اسمبلی میں ہنگامہ

متعلقہ خبریں

ٹاپ اسٹوریز