حادثاتی طور پر دانتوں کا ڈاکٹر بن گیا، ڈاکٹر عارف علوی

پاکستان سیاحت کیلئے پر امن ملک بن چکا ہے، صدر مملکت

فوٹو: فائل

لاہور: صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی نے کہا ہے کہ میں حادثاتی طور پر دانتوں کا ڈاکٹر بن گیا۔

لاہور میں ہونے والے بین الاقوامی ڈینٹسری کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی نے کہا کہ ہم بیماریوں کا انتظار کرتے ہیں لیکن اس کے تدارک کے لیے کچھ نہیں کرتے۔ دانتوں کے مرض سے آگاہی انتہائی ضروری ہے۔

ڈاکٹر عارف علوی نے دانتوں کی بیماریوں کے حوالے سے بتایا کہ 90 فیصد دانتوں کی بیماریوں سے پرہیز کرکے بچا جاسکتا ہے، میرے تحقیقی مکالے بھارت میں شائع ہوگئے لیکن پاکستان میں شائع نہیں ہوسکے ہیں۔

صدر مملکت نے کہا کہ ڈینٹل ڈاکٹر کو کم از کم 6 ماہ سرکاری اسپتال میں گزارنا لازمی قرار دینا ہو گا، اس ملک کا فکر مند نوجوان نہیں ہوگا تو کون ہو گا۔

کشمیر سے متعلق بات کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ مقبوضہ کشمیر میں جیسے ہی کرفیو اٹھے گا وہاں خون خرابہ ہو گا۔ ایک لاکھ قربانیوں کے باوجود کشمیریوں کا جزبہ کم نہیں ہوا ہے۔ کشمیر بہت بے چین ہیں اور آزادی کی تحریک کو کوئی نہیں روک سکتا۔

یہ بھی پڑھیں مظفر گڑھ: مصطفے کھر کا کتا زخمی کرنے پر غریب کاشتکار کے خلاف مقدمہ

انہوں نے کہا کہ بلین ٹری سونامی منصوبے سے ووٹ نہیں ملتے لیکن یہ قوم کے لیے ضروری تھا۔

متعلقہ خبریں

ٹاپ اسٹوریز