‘آپ کا مشرف کی پارٹی سے کیا تعلق ہے’

'آپ کا مشرف کی پارٹی سے کیا تعلق ہے'

فائل فوٹو

اسلام آباد: عدالت عالیہ نے پاکستان سوشل اینڈ ڈیموکریٹک پارٹی کی درخواست خارج کردی ہے جس میں استدعا کی گئی تھی کہ غازی عبد الرشید قتل کیس میں سابق صدر جنرل (ر) پرویز مشرف کے خلاف درج  ایف آئی آر خارج کرنے کا حکم دیا جائے۔

اسلام آباد ہائی کورٹ کے چیف جسٹس اطہر من اللہ نے فریقین کے دلال سنے اور پرویز مشرف کے حوالے سے درخواست ناقابل سماعت قرار دے کر مسترد کر دی۔

چیف جسٹس نے وکیل سے دوران سماعتدرخواست گزار کے وکیل استفسار کیا کہ آپ کی پارٹی کا پرویز مشرف کی ایف آئی آر سے کیا تعلق ہے۔

خاتون وکیل نے جواب دیا کہ وہ سابق صدر رہے ہیں ہم اس لیے آئے ہیں۔

عدالت نے ریمارکس دیے کہ نہ آپ متاثرہ فریق ہیں اور نہ مفرور ملزم پرویز مشرف عدالت کے سامنے موجود ہے، اگر پرویز مشرف آجائے تو پھر ہی کیس کو آگے بڑھایا جاسکتا ہے۔

چیف جسٹس نے سرکاری وکیل سے استفسار کیا کہ پرویز مشرف کے خلاف ایف آئی آر 2013 میں درج ہوئی اور اب کیس کہاں تک پہنچا ہے؟

سرکاری وکیل نے عدالت کو آگاہ کیا کہ کیس کا چلان 2014 میں عدالت میں جمع ہوا تھا۔

عدالت نے استفسار کیا کہ ٹرائل ابھی تک مکمل کیوں نہیں ہوا؟ سرکاری وکیل نے جواب دیا کہ کچھ معلوم نہیں ٹرائل ابھی تک مکمل کیوں نہیں ہوا۔

متعلقہ خبریں

ٹاپ اسٹوریز