عراقی ویزا کے اجراء کا مسئلہ خوش اسلوبی سے طے پا گیا ہے، وزیرخارجہ

‘ کشمیریوں کے قاتلوں کے ساتھ نہیں بیٹھ سکتا’

فوٹو: فائل

اسلام آباد: وزیرخارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی نے کہا ہے کہ  پاکستانی زائرین کے ویزا کے مسائل حل ہوگئے ہیں۔

وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے  یہ بات آج اپنے ایک وڈیو بیان میں کی ہے ۔ شاہ محمود قریشی نے کہا کہ میری ابھی عراق کے وزیر خارجہ محمد علی حاکم سے ٹیلیفون پر بات ہوئی ہے۔

شاہ محمود قریشی  کہا کہ مجھے یہ بتاتے ہوئے مسرت محسوس ہو رہی ہے کہ اربعین کے ویزا کے اجراء کا مسئلہ خوش اسلوبی سے طے پا گیا ہے۔

وزیر خارجہ نے کہا کہ پچھلی مرتبہ بھی یہ مسئلہ سامنے آیا تھا جسے بروقت رابطہ کر کے حل کر لیا گیا ،اس مرتبہ بھی وہی مسئلہ درپیش ہوا۔

انہوں نے کہا کہ میں عراقی حکومت اور ان کی وزارت خارجہ کا شکرگزار ہوں کہ انہوں نے ہماری درخواست کو قبول کیا۔ وہ لوگ جو اربعین کے لیے عراق جانے کے خواہشمند ہیں اور انہوں نے ویزا کیلئے درخواستیں دے رکھی ہیں ان کو ویزے جاری کر دیئے جائیں گے۔

مخدوم شاہ محمود قریشی نے کہا کہ یہ بھی فیصلہ ہوا ہے کہ اس سلسلے میں جو اضافی اسٹاف درکار ہو گا وہ بھی عراقی سفارت خانے سے بھیجا جائے گا تاکہ ویزہ کے امور بروقت تکمیل پا سکیں۔

شاہ محمود قریشی کا کہنا ہے تھاہم نے یہ بھی طے کیا ہے کہ اس مسئلے کے مستقبل حل کیلئے کوئی باہمی متفقہ لائحہ عمل ترتیب دیا جائے جیسا کہ عراق اور خلیجی ممالک کے مابین ہے تاکہ آئندہ یہ مسائل پیش نہ آئیں اورپاکستانی شہریوں کو ویزا کے حصول میں دشواری کا سامنا نہ کرنا پڑے۔

ان کا کہنا تھا کہ میں نے انہیں دورہ ء پاکستان کی دعوت بھی دی ہے جو انہوں نے قبول کی ہے۔ انہوں نے یہ بھی کہا کہ عراقی حکومت کی خواہش ہے کہ نہ صرف اہل تشیع بلکہ اہل سنت بھی جو زائرین زیارات کیلئے عراق آمد کے خواہاں ہیں انہیں خوش آمدید کہیں گے۔

یہ بھی پڑھیے:  پاکستان ایف اے ٹی ایف کو مطمئن کرنے میں کامیاب رہا، شاہ محمود قریشی

شاہ محمود قریشی نے اپنے عراقی ہم منصب کے حوالے سے کہا کہ عراق میں امام ابو حنیفہؒ  اور حضرت شیخ عبدالقادر جیلانیؒ کے روضہ پر بھی جو آنا چاہیں وہ انہیں سہولت فراہم کریں گے ، ہمیں خوشی ہے کہ یہ مسئلہ خوش اسلوبی سے طے پا گیا ہے۔

متعلقہ خبریں

ٹاپ اسٹوریز