ایل این جی کیس: شاہد خاقان اور مفتاح کے ریمانڈ میں 28 اکتوبر تک توسیع

ایل این جی کیس: شاہد خاقان اور مفتاح کے ریمانڈ میں 28 اکتوبر تک توسیع

فائل فوٹو

اسلام آباد: احتساب عدالت نے سابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی اور سابق وزیر مفتاح اسماعیل کے جوڈیشل ریمانڈ میں 14 اکتوبر تک توسیع کر دی ہے۔

شاہد خاقان عباسی، مفتاح اسماعیل اور سابق ایم ڈی پی ایس او شیخ عمران الحق کو اڈیالہ جیل سے احتساب عدالت کے جج محمد بشیر کے روبرو پیش کیا گیا۔

دوران سماعت شاہد خاقان عباسی نے کہا کہ جیل میں ساتھیوں اور وکلا سے نہیں ملنے دیا جارہا، اکٹھے بیٹھنے تک دفاع کیسے کریں گے۔

ان کا کہنا تھا کہ پوری مشینری استعمال ہورہی  ہے، عدالتی احکامات نہیں مانے جارہے اگر حکومت کوبہت شوق ہے توپہلے رہا کرے پھردوبارہ گرفتار کرلے۔

یہ بھی پڑھیں: ایل این جی کیس: نیب کو شاہد خاقان کیخلاف وعدہ معاف گواہ مل گئے

سابق وزیراعظم نے استدعا کی کہ جیل میں ملزمان کی آپس میں ملاقات، وکلا سے مشاورت اوردفاع کے لیے لیپ ٹاپ استعمال کرنے کی اجازت دی جائے۔

ان کا کہنا تھا کہ عدالت میڈیکل رپورٹ بھی منگوائے۔ جج نے ریمارکس دیے کہ اگرجیل مینوئل میں لکھا ہوگا تو ہی وہ اجازت دیں گے۔

عدالت نے تینوں ملزمان کے جوڈیشل ریمانڈ میں توسیع کرتے ہوئے 28 اکتوبر کو دوبارہ پیش کرنے کا حکم دے دیا۔

پیشی کے بعد ذرائع ابلاغ سے بار کرتے ہوئے سابق وزیراعظم کا کہنا تھا کہ  نیب کو سمجھ نہیں آرہا کہ کیا کیس بنایا جائے، م تو برداشت کرلیں گے لیکن حکومت سے نہیں ہوگا۔

سابق وزیراعظم کا یہ بھی کہنا تھا کہ مولانا فضل الرحمن کا آزادی مارچ بڑی کامیابی ہے لیکن شرکت کا فیصلہ پارٹی قیادت کرے گی۔

متعلقہ خبریں

ٹاپ اسٹوریز