’فضل الرحمان کے غیر قانونی اقدام کیخلاف کارروائی ہوگی‘

مولانا فضل الرحمان کبھی وزیراعظم نہیں بن سکتے، شوکت یوسفزئی

پشاور: وزیر اطلاعات خیبرپختونخوا شوکت یوسفزئی نے خبردار کیا ہے کہ کسی کو ریاست کی رٹ چیلنج نہیں کرنے دیں گے اور جمعیت علمائے اسلام (ف) کے سربراہ مولانا فضل الرحمان ایسا کرنے سے دور رہیں۔

پشاور میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ مولانا فضل الرحمان کے غیرقانونی اقدام کے خلاف کارروائی ہوگی۔

انہوں نے سوال کیا کہ اگر ہماری حکومت گئی تو کیا مولانا وزیراعظم بن سکیں گے؟ان کے پیچھےکون ہے؟

شوکت یوسفزئی نے کہا کہ مولانا صاحب حکومت کےخلاف بےبنیاد مہم چلانا چاہتے ہیں۔

انہوں نے اعلان کیا کہ باوردی فورس بناکر ڈنڈے لہرانے پر کارروائی ہوگی اور جے یو آئی (ف) کے کارکنوں کے خلاف مقدمے بنیں گے۔

ان کا کہنا تھا کہ مولانا فضل الرحمان نے پانچ ہزار کارکن اکھٹے کرنے کا دعویٰ کیا تھا تاہم پشاور میں صرف 1200 سے زیادہ کارکن جمع نہیں کرسکے۔

شوکت یوسفزئی نے کہا کہ ڈنڈا بردار جھتے دکھاکر سیاست نہیں ہوتی، بڑی مشکل سے ملک میں امن قائم ہوا۔

پی ٹی آئی رہنما نے کہا کہ مولانا فضل الرحمان کو عوام نے مسترد کردیا ہے، اقتدار کے بغیر وہ مچھلی کی طرح تڑپ رہے ہیں۔

انہوں نے الزام عائد کیا کہ فضل الرحمان کے پیچھے پیسہ ہے تاہم وہ کبھی وزیراعظم نہیں بن سکتے۔ ان کا کہنا تھا کہ جمعیت علمائے اسلام (ف) کے سربراہ اداروں کو دھمکیاں دے رہے ہیں۔

وزیر اطلاعات کے پی کا کہنا تھا کہ مدارس تو بہت زبردست ادارے ہیں تاہم وہاں کے بچوں کو بھی مولانا استعمال کرنا چاہتے ہیں۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ مہنگائی اور مشکل صورتحال کی بات تو ہم بھی کرتے ہیں۔

متعلقہ خبریں

ٹاپ اسٹوریز