‘آزادی مارچ کیلئے مولانا کو50 کروڑ روپے پہنچ گئے’

فضل الرحمان کی گرفتاری کیلئے درخواست دائر

فائل فوٹو

اسلام آباد:جمیت علمائے اسلام (ف) کے سربراہ مولانافضل الرحمان کو آزادی مارچ کے لیے کوٹ لکھپت جیل کے قیدی نے 50 کروڑ روپے پہنچا دیے ہیں۔

ملک کے سینیئرصحافی عارف حمید نے مذکورہ انکشاف ایک نجی ٹی وی شو میں کیا۔

ان کا کہنا تھا کہ مولانا فضل الرحمان نے لندن میں موجود ایم کیو ایم کے لوگوں سے بھی رابطہ کیا ہے۔

سینیئرصحافی نے کہا کہ ن لیگ شریف خاندان کو بچانے کے لیے مولانا کے ذریعے حکومت پر دباو بڑھانا چاہتی ہے۔

انہوں نے کہا یہ حکومت کی نااہلی ہے جس کی وجہ سے مولانا ہیرو بنے ہوئے ہیں ورنہ جس شخص کے پاس چار سیٹیں ہیں وہ اکیلا کیسے اتنا بڑا احتجاج کر سکتا ہے۔

خیال رہے کہ جے یو آئی کا آزادی مارچ 27 اکتوبر کو کراچی سے شروع ہوگا اور ملک کے مختلف حصوں سے قافلے 31 اکتوبر کو اسلام آباد میں داخل ہوں گے۔

جے یوآئی کراچی ڈویژن کے قافلے سہراب گوٹھ سےبراستہ سپرہائی وے آزادی مارچ کا آغاز کریں گے۔ حیدرآباد ڈویژن کےجلوس ایک بجے سپرہائی وے پرآزادی مارچ میں شامل ہوں گے۔

دوسری جانب ن لیگ نے بھی احتجاج میں شرکت کے حوالے سے حکمت عملی تیار کر لی ہے جس کا اعلان 16 اکتوبر کو کیا جائے گا۔

متعلقہ خبریں

ٹاپ اسٹوریز