’مانگے تانگوں کیلئے آسامیاں خالی  اور عوام الناس کیلئے روزگار نہیں‘

اسلام آباد: پاکستان پیپلزپارٹی کے مرکزی سیکرٹری جنرل نیر بخاری نے کہاہے کہ ایک کروڑ نوکریاں دینے والے چار سو محکمے بند کرنے کا اعلان کرکے  بے روزگاروں کی تعداد ایک کروڑ تک لے جائینگے۔

پاکستان پیپلز پارٹی کے سیکرٹری جنرل سید نیر حسین بخاری نےکہا ہے کہ ملکی معاشی صورت حال پر عالمی بینک  کی رپورٹ حکمرانوں کی گڈ گورنس کا پول کھول رہی ہے ۔

انہوں نے کہا کہ آئی ایم ایف جانے پر خودکشی کا دعوی تو سچ ثابت نہ ہو سکا لیکن ملک  کوبین الاقوامی مالیاتی اداروں کی ڈکٹیشن لینے والوں نے لوگوں کو خودکشیوں پر مجبور کر دیا ہے ۔

پاکستان پیپلز پارٹی کے سیکرٹری جنرل سید نیر حسین بخاری نے بدھ کو جاری کیے گئے اپنے بیان میں کہا ہے کہ مہنگائی رفتار  مزید بڑھنے کا اندیشہ حکومتی ناایلیت ہے نالائق نااہل حکمرانوں نے ملک کو معاشی اقتصادی سطح پر کئی برس پیچھے دھکیل دیا گیا ہے ۔

نیر بخاری نے مزید کہا کہ حکومتی معاشی پالیسیوں کی وجہ سےصنعتوں  کی بندش ہونے سے 40 لاکھ لوگ بے روزگار ہو چکے ہیں ۔

انہوں نے کہا کہ ایک کروڑ نوکریاں دینے والے چار سو محکمے بند کرنے کا اعلان کرکے  بے روزگاروں کی تعداد ایک کروڑ تک لے جایینگے ۔

پیپلز پارٹی کے رہنما نے کہا کہ ایسے لگتا ہے کہ پی ٹی آئی سربرای نے دراصل ایک کروڑملازمتیں دینے کی بجائے ایک کروڑ نوکریاں واپس لینے کا اعلان کیا تھا۔

نیر بخاری نے کہا کہ بیرونی قرضوں میں تاریخ کا سب سے بڑا اضافہ ہواآئی ایم ایف کے ساتھ ایڈجسٹمنٹ سے اشیاء ضروریہ کی قیمتوں میں مزید اضافہ کا اندیشہ ہے۔

انہوں نے کہا کہ ملک کو بیرونی قرضوں میں جکڑنے والے عوام الناس کی زندگیاں مزید اجیرن بنانے کے درپے ہیں وزیروں مشیروں کی فوج ملکی خزانے پر بوجھ اور عوام ریلیف سے محروم ہیں ۔

یہ بھی پڑھیے:نیب کی جانب سے سیاستدانوں کو بدنام کیا جا رہا ہے،نیر بخاری

نیر بخاری نے کہا کہ مانگے تانگوں کیلئے آسامیاں خالی  اور عوام الناس کیلئے روزگار نہیں ہے ۔ انہوں نے کہا کہ بینکوں کےرواں کھاتوں میں شدید کمی کا رحجان حکمرانوں پربداعتمادی کی گواہی ہے۔

متعلقہ خبریں

ٹاپ اسٹوریز