جے یو آئی کی ذیلی تنظیم کو کالعدم قرار دینے کا فیصلہ

جے یو آئی ف کی ذیلی تنظیم انصار الاسلام کالعدم قرار

فوٹو: فائل

اسلام آباد: حکومت پاکستان نے جمعیت علمائے اسلام(ف) کی ذیلی تنظیم انصارالاسلام کو کالعدم قرار دینے کا فیصلہ کر لیا گیا ہے۔

ذرائع کے مطابق کالعدم قرار دینے کی سمری وزارت قانون اور الیکشن کمشن کو ارسال کر دی گئی ہے۔

اطلاعات ہیں کہ انصارالاسلام کو کالعدم قرار دینے کی سمری وزارت داخلہ کی جانب سے بھجوائی گئی۔

سمری میں موقف اپنایا گیا ہے کہ جے یو آئی ف کی ذیلی تنظیم لٹھ بردار ہے اور  قانون اس کی اجازت نہیں دیتا۔

ذرائع وزارت داخلہ کے مطابق سمیر کے متن میں درج ہے کہ قانون کسی قسم کی مسلح ملیشیا کی اجازت نہیں دیتا۔

وزارت داخلہ کی جانب سے متعلقہ محکمو کو ارسال کی گئی سمری میں درج ہے کہ جے یو آئی میں شامل تنظیم پارٹی منشور کی شق نمبر 26 کے تحت الیکشن کمشن میں بھی رجسٹرڈ ہے۔

انصار الاسلام نے گزشتہ روز جمیت علمائے اسلام کے سربراہ مولانا فضل الرحمان کو گارڈ آف آرنر بھی پیش کیا تھا۔

خیال رہے کہ انصار السلام کے تین ہزار رضا کار الیکشن کمیشن میں رجسٹرڈ ہیں اور ان کا کام جمیت علمائے اسلام کے اجتماعات میں اعلیٰ قیادت کو سیکیورٹی فراہم کرنا اور نظم ضبط برقرار رکھنا ہوتا ہے۔

رضاکاروں کا تعلق مولانا کی جماعت کے زیرانتظام چلنے والے مدرسوں سے ہے۔ ان کے ہاتھ میں سیاہ اور سفید رنگ کی پٹیوں والا پرچم اور ڈنڈے ہوتے ہیں۔

متعلقہ خبریں

ٹاپ اسٹوریز