ہائیکورٹ کا سندھ حکومت کو کینسر اتھارٹی بنانے کا حکم

سندھ ہائی کورٹ: منی لانڈرنگ کیس میں خانانی اینڈ کالیا گروپ بری

کراچی : سندھ ہائی کورٹ نے سندھ حکومت کو فوری طور پر کینسر اتھارٹی بنانے اوراس ضمن میں قانون سازی  کا حکم دے دیا ہے۔

عدالت عالیہ نے یہ حکم آج گٹکے ،ماوے اورمین پوری جیسی اشیاء پر پابندی سے متعلق درخواست کی سماعت  کے  دوران دیا ۔

اس ضمن میں ڈائریکٹر جنرل  محکہ صحت نے اپنی رپورٹ بھی عدالت میں جمع کرائی ہے ۔

محکمہ صحت کے ڈی جی کی رپورٹ میں کہا گیاہے کہ پورے صوبے میں پانچ سالوں میں ایک لاکھ 76 ہزار سے زائد افراد کینسر کا شکار ہوئے ہیں۔رپورٹ میں کہا گیاہے کہ جناح اسپتال نے سندھ حکومت سے فوری طور پر 600 ملین روپے گرانٹ بھی مانگ لی ہے۔

عدالت عالیہ نے رپورٹ دیکھنے کے بعد حکم جاری کیا کہ ایسی صورتحال پر قابو پانے کے لئے جنگی بنیادوں پر کام کیا جائے، کینسر اتھارٹی میں جناح اسپتال اور ایس آئی یوٹی کے ماہر ڈاکٹرز کو بھی شامل کیا جائے۔

یہ بھی پڑھیے: سندھ اسمبلی : گٹکا بنانے،ذخیرہ ،فروخت کرنے اور کھانے پر پابندی کا بل پیش

سندھ ہائیکورٹ نے گٹکے پر پابندی سے متعلق فوری  قانون سازی کا حکم  دینے کے ساتھ ساتھ جناح اسپتال کے لئے فوری اسپیشل فنڈ ریلیز کرنے کی ہدایت بھی کردی ہے ۔

متعلقہ خبریں

ٹاپ اسٹوریز