پنجاب اسمبلی کا اجلاس مولانافضل الرحمان کے دھرنے سے مشروط

نجی تعلیمی اداروں میں ناچ گانے کا معاملہ پنجاب اسمبلی پہنچ گیا

لاہور: وفاقی دارالحکومت اسلام آباد میں جمیعت علمائے اسلام کے دھرنے اور موجودہ سیاسی صورتحال کے پیش نظر پنجاب اسمبلی کا اجلاس طلب  کیا جائے یا نہیں ؟؟ پنجاب حکومت اس حوالے سے کشمکش کا شکار ہوگئی۔

ذرائع کے مطابق پنجاب اسمبلی کے اجلاس کو مولانا فضل الرحمان کے  دھرنے سے مشروط کردیا گیا ہے۔ اجلاس آزادی مارچ دھرنے کے ختم ہوتے ہی طلب کیا جائیگا۔

آزادی مارچ کے دھرنے کے ختم ہوتے ہی اجلاس طلب کرنے کا قوی امکان بھی سامنے آگیا ہے۔ وزارت قانون نے اجلاس طلب کرنے کے حوالے سے سمری بھی تیار کرلی ہےجسے دھرنا ختم ہوتے ہی گورنر پنجاب کو ارسال کردیاجائےگا۔

واضح رہے کہ پنجاب اسمبلی کا گزشتہ اجلاس اپوزیشن کی ریکوزیشن پر گیارہ  اکتوبر کو طلب کیا گیا تھاجو صرف ایک روز ہی چل پایا۔

حکومت نے پنجاب اسمبلی کا باقاعدہ اجلاس چودہ اکتوبر کو طلب کرنے کا فیصلہ کیا تھا تاہم آزادی مارچ اور ایم ٹی آئی ایکٹ پر ڈاکٹرز تنظیموں کی ہڑتال کے باعث فوری اجلاس طلب نہ کرنے کا فیصلہ کیا گیا تھا۔

یہ بھی پڑھیے: وزارت داخلہ میں انٹری: حریم شا ہ کےخلاف مقدمہ درج کر نے کے لیے پنجاب اسمبلی میں قرارداد جمع

دوسری جانب حکومت اور اپوزیشن کے درمیان بڑھتی ہوئی کشیدگی بھی اسمبلی اجلاس طلب کرنے کے آڑے آئی ہے ۔

متعلقہ خبریں

ٹاپ اسٹوریز