’حریم شاہ اگر وزیراعظم کی کرسی پر وڈیو بناسکتی ہے تو میں بھی عمران خان سے ملناچاہتا ہوں‘

اسلام آباد:آج مولانا فضل الرحمان کے آزادی مارچ میں اس وقت  دلچسپ صورتحال پیدا ہوگئی جب ایک  شہری ملحقہ موبائل کمپنی کے ٹاور پر چڑھ گیااور پولیس اور انتظامیہ کو خودکشی کی دھمکی دے دی ۔

نوجوان نے کہا حریم شاہ اگر وزیراعظم کی کرسی پر بیٹھ کر ٹک ٹاک بنا سکتی ہے تو میں بھی  وزیراعظم عمران خان سے ہاتھ ملانا چاہتا ہوں وزیر اعظم پر میرا بھی حق ہے ۔

اسلام آباد میں شہری موبائل کمپنی کے ٹاور پر چڑھا تو پولیس کو اس کے ساتھ مذاکرات کرنا پڑے۔ نوجوان نے کہا میں نے وزیراعظم کے ساتھ ملاقات اور دیہات میں سہولیات کا مطالبہ کرنا ہے۔ اندھیرا ہونے کے بعد پولیس نے شہری کو باحفاظت نیچے اتار لیا۔

نوجوان نے پولیس سے مذاکرات میں کہا اگر ٹک ٹاک گرل حریم شاہ وزارت خارجہ میں جاکر ویڈیوز اور تصاویز بنا سکتی ہے تو کیا میرا حق نہیں ہے؟  میں اپنے لئے کچھ نہیں مانگتا میرے دیہات میں سہولتیں دی جائیں۔

یہ بھی پڑھیے: جے یو آئی ف  کا دھرنا: سستے بازاروں سے وابستہ ہزاروں مزدوروں،اسٹال ہولڈرز کا کاروبار ٹھپ

پولیس اور انتظامیہ نے ساڑھے تین گھنٹوں کے بعد اندھیرے کا فائدہ اٹھاتے ہوئے شہری قاسم کو اتار کرتحویل میں بھی لے لیا۔

متعلقہ خبریں

ٹاپ اسٹوریز