منشیات اسمگلنگ کیس: راناثنا کی درخواست ضمانت مسترد

رانا ثناءاللہ کی درخواست ضمانت پر سماعت غیرمعینہ مدت کیلئے ملتوی

فائل فوٹو

لاہور: عدالت نے منشیات اسمگلنگ کیس میں ن لیگی رہنما رانا ثنا اللہ کی درخواست ضمانت مسترد کردی ہے۔

انسداد منشیات کے خصوصی جج شاکر حسن نے فرہاد علی شاہ کی درخواست پر محفوظ کیا گیا فیصلہ سنایا۔

ن لیگی رہنما کے وکیل فرہاد علی شاہ نے موقف اپنایا کہ سی سی ٹی وی فوٹیج کے مطابق رانا ثناءاللہ کی گاڑی 3:34 منٹ پر لاہور کنال روڑ پر پہنچی اور ان کی گاڑی پندرہ منٹ کے اندر اے این ایف کے آفس پہچ گی

وکیل استغاثہ نے کہا کہ رانا ثناءاللہ کی گاڑی کی سی سی ٹی وی فوٹیجز کو ریکارڈ کا حصہ بنایا گیا ہے اور اس کی بنیاد دوبارہ درخواست ضمانت دائر کی ہے۔

درخواست میں موقف اپنایا گیا تھا کہ سیف سٹی اتھارٹی کی فوٹیجز کے بعد رانا ثنااللہ کا موقف درست ثابت ہوا ہے عدالت سابق وزیرقانون کی ضمانت منظور کرنے کا حکم دے۔

خیال رہے کہ  اینٹی نارکوٹکس فورس (اے این ایف) نے مسلم لیگ ن کے رہنما رانا ثناءاللہ کو یکم جولائی کو منشیات اسمگلنگ کیس میں گرفتار کیا تھا۔

رانا ثنااللہ فیصل آباد سے پارٹی اجلا سں شریک ہونے کے لیے لاہور آرہے تھے جب انہیں تحویل میں لے لیا گیا۔ اے این ایف ذرائع کے مطابق منشیات کے اسمگلر نے تفتیش میں ن لیگی رہنما کا نام لیا تھا۔

اے این ایف حکام کے مطابق رانا ثنا اللہ کی گاڑی سے منشیات کی بھاری مقدار برآمد ہوئی اور کے خلاف نارکوٹکس ایکٹ کے تحت مقدمہ درج کیا گیا ہے۔

متعلقہ خبریں

ٹاپ اسٹوریز