خیبرپختونخوامیں طلبہ کو بھاری بھرکم بستوں سے نجات دینے کے لئے حکمت عملی تیار

پشاور: خیبرپختونخوامیں طلبہ کو بھاری بھرکم بستوں سے نجات دینے کے لئے حکمت عملی تیار ،محکمہ تعلیم خیبرپختونخوا نے ”خیبرپختونخوا سکول بیگز ایکٹ 2019“ تیار کرلیا۔

خیبر پختونخوا محکمہ تعلیم نے طلبہ کو بھاری بستوں سے چھٹکارا دلانے  کے لئے سکول بیگز ایکٹ 2019 تیار کر لیا ہے ، بل کے مطابق بستے کا وزن بچے کے جسمانی وزن کے 15 فیصد سے زائد نہیں ہوگا۔

حکام کا کہناہے کہ بل جلد صوبائی اسمبلی میں منظوری کے لیے پیش کیا جائے گا، مشیر تعلیم ضیا اللہ بنگش کے مطابق سکول بیگز کازیادہ  وزن بچوں کی صحت کے لیے نقصان دہ ہے، جبکہ اقدام والدین کی شکایات پر اٹھایا گیا۔

اس ضمن میں تیار کیا گیا  ایکٹ تمام سرکاری سکولز، نجی سکولز اور مدارس پر یکساں لاگو ہو گا ،ایکٹ کے تحت پلے گروپ سے بارہویں  کلاس تک طلباء کے سکول بیگز کا وزن کم کرنے کے لئے اقدامات کئے جائنگے۔

آئی ایم یو اور ڈائریکٹریٹ آف ایلمنٹری اینڈ سیکنڈری ایجوکیشن سرکاری سکولوں میں جبکہ پرائیویٹ سکول ریگولیٹری اتھارٹی نجی سکولوں میں اس ایکٹ پر عملدرآمد یقینی بنائیں گے۔

یہ بھی پڑھیے: خیبرپختونخوا کے محکمہ تعلیم میں سیاسی مداخلت کا انکشاف

خلاف ورزی کرنے والے اسکول  کے پرنسپل پر دو لاکھ روپے تک کا جرمانہ بھی کیا جائے گا۔،بستوں کا بوجھ کم کرنے کے لئے ،سکول انتظامیہ طلبہ کی کتابوں کاپیوں کے لیے لاکرز یا الماری کی سہولت بھی فراہم کرنے کا پابند ہو گی ۔

متعلقہ خبریں

ٹاپ اسٹوریز