’ مجموعی قومی پیداوار 1141 ارب ڈالرز سے بڑھ کر 1195 ارب ڈالرز ہو گئی‘

اسلام آباد: پاکستان تحریک انصاف کے ترجمان احمد جواد نے دعوی کیا ہے کہ  مجموعی قومی پیداوار 1141 ارب  ڈالرز سے بڑھ کر 1195 ارب ڈالرز ہو گئی ہے۔

اپنے جاری کردہ بیان میں احمد جواد نے حکومت کی کامیابیاں گنواتے ہوئے کہا کہ پہلے سال کے دوران افراط زر ن لیگ کی حکومت کے پہلے سال کے افراط زر یعنی 8.4% کے مقابلے میں 7.6% رہا۔

انہوں نے بتایا کہ مالی سال کی پہلی سہ ماہی کے دوران ایف بی آر کی جانب سے 30 ارب روپے کے ٹیکس ریفنڈز جاری کئے گئے۔  گزشتہ 1 برس کے دوران ٹیکس گوشوارے داخل کرنے والوں کی تعداد میں بھی  8 لاکھ کا اضافہ ہوا۔

تحریک انصاف کے ترجمان نے کہاہے کہ • 2018-19 کے دوران کرنٹ اکاؤنٹ خسارہ 32% یعنی 6 ارب ڈالرز کم ہوا جبکہ 2019 کے جولائی اگست کے دوران اس میں 55% کمی آئی ہے۔

انہوں نے کہا کہ محصولات جمع کرنے کی شرح  15% بڑھی جبکہ ان لینڈ ٹیکس ریونیو میں 25% اضافہ ہوا۔  سٹیٹ بنک آف پاکستان کے مطابق زرمبادلہ کے ذخائر بڑھ کر 16 ارب ڈالرز کی سطح تک جاپہنچے ہیں۔

احمد جواد کے مطابق  جولائی تا اگست 2019 کے دوران پاکستان کی برآمدات میں 12% اضافہ ہوا۔ اگست 2019 میں تجارتی خسارہ 36% تک کم ہوکر 41 ماہ کی کم ترین سطح پر آگیا ہے۔

پی ٹی آئی ترجمان نے کہا • 18-2017 کے ماہانہ 38 ارب کے مقابلے میں 19-2018 کے دوران گردشی قرضہ 26 ارب ماہانہ تک کم ہوا جبکہ اب یہ 12 ارب ماہانہ کی سطح پر ہے۔ ترسیلات زر 10% اضافے کے ساتھ گزشتہ 4 برس کی بلند ترین سطح پر ہیں۔

یہ بھی پڑھیے: پاکستان کی جی ڈی پی سے متعلق اقوام متحدہ کا انتباہ

انہوں نے کہا کہ مالی سال کی پہلی سہ ماہی کے دوران پاکستان کو فارن پورٹ فولیو سرمایہ کاری کی مد میں 346 ملین ڈالرز موصول ہوئے ۔  گزشتہ 50 روز میں کراچی سٹاک ایکسچینج 100 انڈیکس میں 4872 پوائنٹس تک پہنچ گیا ہے۔

متعلقہ خبریں

ٹاپ اسٹوریز