’ برہنہ مناظر شوٹ کرانے کیلیے مجبور کیا جاتا ہے ’

نیویارک: ایچ بی او کی مقبول ترین فینٹیسی سیریز ’گیم آف تھرونز‘ کی مرکزی کردار کالیسی کو نبھانے والی اداکارہ ایمیلیا کلارک نے انکشاف کیا ہے کہ نئی فلموں کے پروڈیوسرز کی جانب سے انہیں برہنہ مناظر کی عکس بندی کرانے کیلیے مجبور کیا جاتا ہے۔

حالیہ انٹرویو میں خوبرو اداکارہ کا کہنا تھا کہ فلمی صنعت میں کئی سالوں سے کام کرنے کے بعد وہ جانتی ہیں کہ ایسے ہدایت کاروں کو کیسے خاموش کرانا ہے۔

انہوں نے کہا کہ اکثر ہدایت کاروں کی جانب سے کہا جاتا ہے کہ آپ ایسے مناظر کی عکس بندی نہ کرا کے اپنے گیم آف تھرونز کے مداحوں کو مایوس کر رہی ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ برہنہ مناظر کے لئے مجبور کئے جانے پر میں نے فلموں کے سیٹس پر ہدایت کاروں سے لڑائی بھی کی ہے۔

گیم آف تھرونز میں بولڈ سینز کے حوالے سے ان کا کہنا تھا کہ اسکرپٹ پڑھنے کے بعد انہیں اندازہ ہوا کہ اس ڈرامے میں کئی برہنہ مناظر کی بھی عکس بندی کی جائے گی۔

ایمیلیا نے سیزن ون کے دوران ان کے شوہر کا کردار نبھانے والے معروف اداکار جیسن ماموا کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ میں اپنے آپ کو بہت خوش قسمت سمجھتی ہوں کہ مجھے جیسن کے ساتھ اداکاری کا موقع ملا۔

کال ڈروگو کا کردار نبھانے والے جیسن ماموا کے ساتھ جنسی مناظر کی عکس بندی کرانے کے حوالے سے ان کا کہنا تھا کہ جیسن نے مجھے سمجھایا کہ اسکرپٹ کی ڈیمانڈ کو پورا کرنے کے لئے ایسے سینز کرنے پڑیں گے۔

انہوں نے بتایا کہ ڈرامہ اسکول سے پاس ہونے کے فوری بعد ہی انہیں گیم آف تھرونز کی پیشکش ہو گئی تھی۔

اس ضمن میں ایمیلیا کا کہنا تھا کہ اسکرپٹ پڑھنے کے بعد مجھے بہت رونا آیا تاہم میں نے اپنے دل کو مضبوط کرتے ہوئے سمجھایا کہ یہ میرا کام ہے اور اسے میں نے بخوبی نبھانا ہے۔

متعلقہ خبریں

ٹاپ اسٹوریز